پاکستان معاشی بحالی کیلئے ٹیکس کی بنیاد بڑھائے‘ فرینڈز آف پاکستان کانفرنس

برسلز (ایجنسیاں + اے ایف پی + رائٹر + ریڈیو مانیٹرنگ) تیسری فرینڈز آف ڈیموکریٹک پاکستان وزارتی کانفرنس یہاں ختم ہو گئی جس کے بعد 19 نکاتی اعلامیہ جاری کر دیا گیا۔ اعلامیے میں پاکستان کیلئے فوری طور پر کسی قسم کی امداد کا اعلان نہیں کیا گیا۔ اعلامیے میں مصر کی احباب پاکستان فورم میں شرکت کا خیرمقدم کرتے ہوئے اسے خوش آمدید کہا گیا اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ 14 اور 15 نومبر کو پاکستان ڈویلپمنٹ فورم کے تحت کانفرنس اسلام آباد میں ہو گی۔ ترکی کی پیشکش پر آئندہ ڈونرز کانفرنس انقرہ میں کرانے کی تجویز تسلیم کر لی گئی۔اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ عالمی برادری پاکستان کو درپیش اقتصادی بحران سے نکلنے میں مدد کرے‘ پاکستان کے اپنے وسائل کے ذریعے بہتری کی کوششوں کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ اعلامیہ میں ورلڈ ایڈ آرگنائزیشن کی طرز پر ادارہ تشکیل دینے کی تجویز کا جائزہ لیا گیا۔ شرکا نے کہا کہ ایسا فورم اور سہولیات پاکستان کی معاشی حالت بہتر بنا سکتی ہے۔ مالاکنڈ کی طرز پر بلوچستان‘ فاٹا اور خیبر پی کے میں بھی ترقیاتی منصوبے شروع کئے جائیں گے۔ پاکستان میں سیلاب متاثرین کی بحالی کے اقدامات قابل تحسین ہیں‘ توانائی ضروریات پر عالمی سطح پر تعاون کو یقینی بنایا جائیگا۔ توانائی کے مسائل پر قابو پانے کے لئے عالمی ماہرین سے مل کر حکمت عملی طے کی جائیگی۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے دوست ممالک کی شرکت کو سراہا ۔ آئندہ وزارتی اجلاس 2011ء کی پہلی ششماہی میں ہو گا۔ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ اب فرینڈز آف پاکستان کا اگلا اجلاس 2011ءمیں ہو گا وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور نمائندہ یورپی یونین کیتھرین ایشٹون نے اجلاس کی مشترکہ صدارت کی۔ او ڈی پی کا پاکستان کی تعمیرنو اور بحالی کے لئے یکجہتی کا اظہاار کیا گیا مشترکہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کی معاشی بحالی کے لئے ٹیکس کی بنیاد بڑھانے کی ضرورت ہے۔ تعمیرنو اور طویل المیعاد ترقی کے لئے مقامی وسائل کا استعمال ضروری ہے۔ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ معاشی استحکام کے سلسلے میں ٹیکس کا دائرہ کار بڑھانے کیلئے پاکستانی حکومت کی مسلسل کوششوں کی ضرورت ہے۔ سیلاب کے بعد تعمیرنو اور بحالی کے مراحل کیلئے پاکستان کو عالمی برادری کی متفقہ حمایت درکار ہے‘ عالمی و ایشیائی بنک کی تیار کردہ نقصانات کے تخمینہ کی رپورٹ تعمیرنو کیلئے اچھی بنیاد فراہم کریگی۔ توانائی کے بارے ٹاسک فورس کی رپورٹ کی توثیق کی گئی یورپی یونین کے پاکستان کو مراعات کے فیصلہ کا خیرمقدم اجلاس کے شرکاءنے آئندہ سال اسلام آباد میں دوسری پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کانفرنس کے انعقاد کے سلسلے میں مکمل حمایت کی یقین دہانی کرائی۔ اٹلی کے وزیر خارجہ فرانکو فرائینی نے یہاں خبردار کیا کہ یورپی یونین کی پاکستان کے ساتھ خصوصی تجارت کی حمایت مشروط ہے۔ یہ علاقائی حریفوں کو ایک جیسی مراعات کے حوالے سے مشروط ہے۔ انہوں نے کہا کہ حدود کے اندر رہ کر ہم آگے بڑھ سکتے ہیں‘ میں جلد پاکستان کا دورہ کروں گا۔ ورلڈ بنک کے سینئر اہلکار نے کہا ہے کہ تباہ کن سیلاب کے بعد پاکستان کو تعمیر نو کے لئے مزید فنڈز کی ضرورت ہے مگر اس کے لئے پاکستان کو یہ یقین دلانا ہو گا کہ وہ ٹیکس نظام اور سبسڈیز کے نظام کو بہتر بنائے گا۔ پاکستان کے لئے ورلڈ بنک کے کنٹری ڈائریکٹر راچڈین میساﺅڈ نے کہا کہ اس حوالے سے یہ وعدہ کرنا ہو گا کہ یہ رقم پہلے 8 سے 12 ماہ کے لئے درکار ہو گی۔ ایشیائی ترقیاتی بنک نے کہا ہے کہ سیلاب کے بعد پاکستان میں انفراسٹرکچر کے تعمیرنو کے لئے دو سے 3 سال لگیں گے۔ ڈونرز اس حوالے سے نومبر تک فنڈز فراہم کر دیں۔ اے ڈی پی کے ایک اہلکار نے کہا کہ پاکستان کو سیلاب کے باعث 9.7 بلین ڈالر کا نقصان ہوا ہے۔ یہ نقصان اس کے گھروں اور کھیتوں کی تباہی کے حوالے سے ہے۔