ملک بھر میں بجلی کے شارٹ فال میں نمایاں کمی کے باوجود شہریوں کو لوڈ شیڈنگ کے بحران سے نجات نہ مل سکی

ملک بھر میں بجلی کے شارٹ فال میں نمایاں کمی کے باوجود شہریوں کو لوڈ شیڈنگ کے بحران سے نجات نہ مل سکی

پیپکو حکام کے مطابق ملک میں بجلی کی پیداوارتیرہ ہزارپانچ سو چھیالیس اورطلب چودہ ہزار چھ سو آٹھ میگاواٹ ہے جبکہ شارٹ فال ایک ہزار باسٹھ میگاواٹ رہ گیا ہے۔ پچھلے دنوں میں گیس کی عدم فراہمی اور سیلاب کی وجہ سے بجلی کا شارٹ فال پانچ ہزار میگاواٹ کے قریب پہنچ چکا تھا جس کی وجہ سے لوڈشیڈنگ کے دورانیے میں بھی اضافہ ہوا تھا۔تاہم اب شارٹ فال میں کمی کے باوجود لوڈشیڈنگ کا دوارنیہ کم نہیں ہو سکا ۔ شہروں میں چھ گھنٹے جبکہ دیہی علاقوں میں آٹھ سے دس گھنٹے تک بجلی کی بندش معمول بن چکی ہے۔