نندی پور پراجیکٹ کیس، دیکھنا ہے منصوبے میں تاخیر کا باعث کون بنا: جسٹس افتخار

نندی پور پراجیکٹ کیس، دیکھنا ہے منصوبے میں تاخیر کا باعث کون بنا: جسٹس افتخار

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) سپریم کورٹ نے نندی پور پاور پراجیکٹ کیس میں اٹارنی جنرل کو عدالت کی معاونت کیلئے نوٹس جاری کرتے ہوئے کیس کی مزےد سماعت تین ہفتے کیلئے ملتوی کردی۔ بابر اعوان اور مسعود چشتی کے وکیل میاں اسرار نے عدالت کو بتایا کہ بابر اعوان کبھی تاخیر کا باعث نہیں بنے۔ انہوں نے کہا کہ رحمت حسین جعفری کمشن کو رپورٹ کے چند پوائنٹس کے سوا رپورٹ سے اتفاق ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس میںکہا کہ ہم نے دیکھنا ہے کہ منصوبے میں تاخیر کا باعث کون بنا ہے۔ رپورٹ دیکھیں گے پھر فیصلہ کریں گے کے کہ رپورٹ کے کس حصے کو تسلیم کرنا ہے اور کس کو نہیںجس کسی کو ریکارڈ چاہئے، وزارت قانون سے رابطہ کرے۔ بابر اعوان نے عدالت کو بتایا کہ رولز کے مطابق کوئی وزارت کسی دوسری وزارت کے خلاف گواہی نہیں دے سکتی، خواجہ آصف وزیر ہیں انہیں استعفیٰ دینا ہو گا۔ کمشن رپورٹ کے مطابق پندرہ ارب کی کرپشن ہے جس میں تین وزراءکا نام سامنے آرہا ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ وزیراعظم نے بھی اس معاملے پر کمیٹی بنائی ہے اور سیکرٹری پلاننگ سے تین روز میں رپورٹ طلب کی ہے۔ عدالت نے کمیٹی کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے سماعت تین ہفتے کیلئے ملتوی کر دی۔