ایسا شفاف نظام وضع کیا جائے کہ امدادی رقوم کی ایک ایک پائی متاثرین تک پہنچائی جا سکے : نوازشریف

لاہور (خبر نگار) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد میاں محمد نوازشریف نے کہا ہے کہ متاثرین مالاکنڈ و سوات کی بحالی کے لئے حاصل کی گئی امدادی رقم کی تقسیم اور خرچ کے لئے ایک ایسا شفاف نظام وضع کیا جائے کہ ایک ایک پائی مستحقین تک پہنچائی جا سکے۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار حکومت جاپان کے پاکستان اور افغانستان سے متعلق خصوصی نمائندے موٹو ہائڈیوشی کاوا کے ساتھ رائیونڈ میں واقع اپنی رہائش گاہ پر خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ شہباز شریف اور پاکستان میں متعین چاپان کے سفیر بھی موجود تھے۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے نوازشریف نے ڈونرز کانفرنس کے انعقاد اور اس کی کامیابی پر حکومت جاپان کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے تجویز پیش کی کہ جاپان پاکستان میں شراکت داری کی بنیاد پر شہروں کی سطح پر زیر زمین ریل کے منصوبوں میں سرمایہ کاری کرے اور شاہراؤں کے فروغ بالخصوص موجودہ موٹروے کی بہتری اور وسطی ایشیا تک اس کی رسائی ممکن بنانے کے لئے مشترکہ جامع منصوبے کا اظہار کریں تاکہ جنوبی ایشیائی خطے میں ترقی کے ایک نئے باب کا آغاز کیا جا سکے اگر 1999ء میں ان کی حکومت پر ایک آمر نے شب خون نہ مارا ہوتا تو آج اس منصوبے کو عملی جامہ پہنایا جا چکا ہوتا۔ موٹو ہائڈیوشی کاوا نے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ انہیں پاکستان کے مقبول ترین رہنما سے مل کر بہت زیادہ خوشی ہو رہی ہے اور حکومت جاپان اور جاپان کے عوام آزمائش کی کٹھن گھڑیوں کے دوران قومی یکجہتی کے فروغ اور چاروں صوبوں کے درمیان ہم آہنگی کی فضا کے قیام میں مسلم لیگ (ن) اور اس کے قائد محمد نوازشریف کے کردار کو نہایت قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ جاپان اور پاکستان کے درمیان تعلقات وقت کے ساتھ ساتھ مزید مضبوط اور مستحکم ہوں گے اور جاپان پاکستان کی اقتصادی ترقی اور عوام کی خوشحالی کے لئے منصوبوں کے اجرا میں اپنا بھرپور کردار ادا کرے گا۔