بیلجیئم: مشتبہ افراد کیخلاف آپریشن‘ پولیس کی فائرنگ سے 2 ہلاک‘ ایک زخمی

بیلجیئم: مشتبہ افراد کیخلاف آپریشن‘ پولیس کی فائرنگ سے 2 ہلاک‘ ایک زخمی

برسلز (نوائے وقت رپورٹ+ اے ایف پی+ رائٹرز) بیلجیئم کے شہر ویوئیرز میں پولیس نے مشتبہ افراد کے خلاف آپریشن کے دوران مشکوک افراد کے ٹھکانوں پر چھاپہ مارا اور اس دوران ہونے والی فائرنگ سے 2 مشتبہ افراد ہلاک ہو گئے۔ بلجیئن ٹی وی کے مطابق ایک شخص زخمی بھی ہوا ہے۔ چھاپے کے دوران دھماکوں کی بھی آوازیں سنی گئیں۔ وفاقی پراسیکیوٹر نے بتایا کہ ایک درجن کے قریب کارروائیاں اس گروپ کے خلاف کی گئیں جو بڑے پیمانے پر دہشت گردی کی کارروائیاں کرنا چاہتا تھا تاہم ان چھاپوں کے دوران پیرس حملوں سے تعلق ثابت نہیں ہوا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اس نے مبینہ انتہا پسندوں کی موجودگی کی اطلاع پر چھاپہ مارا۔ عینی شاہدین کا کہنا ہے انہوں نے 10 منٹ تک مشین گنوں سے فائرنگ کی آوازیں سنیں۔ ایک اور عینی شاہد کے مطابق اس نے ایک دھماکہ کی آواز بھی سنی اور یہ آواز فائرنگ کے بعد سنی گئی۔ چند دوسرے عینی شاہدوں نے خبر دی انہوں نے کئی منٹ تک تیز فائرنگ کی آواز سنی اور کم از کم تین دھماکوں کی آوازیں آئیں۔ غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق بیلجیئم کے دارالحکومت برسلز اور دوسرے شہروں میں بھی کارروائیاں جاری ہیں۔ یہ جگہ ٹرین سٹیشن کے پاس ہے اور اسے چاروں طرف سے بند کر دیا گیا ہے۔ سوشل میڈیا پر آنے والی رپورٹوں کے مطابق قصبے کے مرکز میں پولیس کی بھاری نفری موجود ہے۔ میڈیا پر آنے والی خبروں کے مطابق اس کارروائی کا ہدف ایک شامی جہادی ہیں جو حال ہی میں شام سے بلجیئم آئے ہیں۔ رپورٹس کے مطابق اس بات کی اطلاعات ملی تھیں کہ وہ کسی حملے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔ قبل ازیں بیلجیئن میڈیا نے بتایا تھا پیرس کے حملوں میں استعمال ہونے والا بعض اسلحہ بلجیئم کے دارالحکومت برسلز سے خریدا گیا تھا۔ بلجیئم میں پولیس فرانسیسی حکام کے ساتھ ملکر اس بات کی تفتیش بھی کر رہی ہے کہ بلجیئم کے کسی شہری کا پیرس حملے سے کوئی تعلق ہے یا نہیں۔