ایل این جی سے بجلی کے کارخانے لگانے کیلئے تیز رفتار اقدامات کئے جائینگے: شہباز شریف

ایل این جی سے بجلی کے کارخانے لگانے کیلئے تیز رفتار اقدامات کئے جائینگے: شہباز شریف

لاہور (خبر نگار) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پنجاب میں ایل این جی سے بجلی پیدا کرنے کے کارخانے لگانے کے حوالے سے منصوبہ بندی کی جا رہی ہے- ایل این جی سے بجلی کے کارخانے لگانے کے حوالے سے تیز رفتاری اور شفافیت سے اقدامات کئے جائیں گے- تونسہ ہائیڈروپاور پراجیکٹ انتہائی اہمیت کا حامل منصوبہ ہے- منصوبے میں تاخیر، غفلت  یا کوتاہی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی- میں خود تونسہ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کی نگرانی کروںگا- ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا جس میں پنجاب میں توانائی کے مختلف منصوبوں پر پیشرفت کا جائزہ لیا گیا- اجلاس میں پنجاب میں  ایل این جی پاور پارک کے قیام کے منصوبے پر بھی غور کیا گیا- شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ توانائی بحران نے تعلیم، صحت، زراعت، لائیو سٹاک اور زندگی کے تمام شعبوں کو بری طرح متاثر کیا ہے- توانائی بحران کا جلد خاتمہ ہماری ترجیحات میں شامل ہے- توانائی کی کمی کے مسئلے سے نمٹنے کے لئے ہر ممکن وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں- وزیراعلیٰ نے متعلقہ حکام کو ایل این جی سے بجلی کے کا رخانے لگانے کے حوالے سے فزیبلٹی رپورٹ تیار کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ ایل این جی پارک کے منصوبے سے سستے ذرائع سے بجلی کا حصول ممکن ہو گا- پنجاب میںایل این جی سے ایک ہزار میگاواٹ کے منصوبوں کے حوالے سے منصوبہ بندی کی جائے- پنجاب حکومت نے ہمیشہ شفافیت اور تیز رفتاری سے منصوبوں کی تکمیل یقینی بنائی ہے- قوم کا ایک ایک لمحہ قیمتی ہے اس ضمن میں تیز رفتاری سے آگے بڑھنا ہو گا- وزیراعلیٰ شہباز شریف نے تونسہ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے حوالے سے بروقت اور فوری پیشرفت نہ کرنے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ منصوبے میں تاخیر کسی صورت برداشت نہیں کروںگا- مزید براں شہباز شریف سے گذشتہ روز توانائی کے شعبے کی معروف جرمن کمپنی لہے مائر انٹرنیشنل کے ماہرین نے ملاقات کی جس میں توانائی کے شعبہ میں تعاون کے امکانات کو فروغ دینے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ شہباز شریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو درپیش توانائی کے بحران نے معیشت سمیت زندگی کے تمام شعبوں کو متاثر کیا ہے- توانائی بحران کا خاتمہ کر کے ہی تیز رفتار معاشی و صنعتی ترقی کا ہدف حاصل کیا جا سکتا ہے-  حکومت توانائی بحران کے جلد خاتمے کیلئے ہر ضروری قدم اٹھا رہی ہے- توانائی کی کمی کے مسئلے پر قابو پا نے کیلئے سنجیدگی اور تیز رفتاری سے آگے بڑھ رہے ہیں- حکومت روایتی ذرائع کے ساتھ ساتھ متبادل اور سستے ذرائع سے بجلی کے حصول پر توجہ دے رہی ہے- سولر، ہائیڈرو، کوئلے، بائیوگیس، بائیوماس اور دیگر ذرائع سے توانائی کے حصول کے منصوبوں پر کام کر رہے ہیں- ملکی اور غیر ملکی کمپنیوں کو توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کیلئے خصوصی مراعات دی جا رہی ہیں- سرمایہ کار ی کیلئے سازگار ماحول پیدا کیا گیا ہے- انہوں نے کہاکہ جرمنی کو توانائی کے شعبے میں بڑی مہارت حاصل ہے اور ہم جرمن ٹیکنالوجی اور تجربے سے فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں-