پاکستان‘ ترکی کا تجارت بڑھانے پر اتفاق‘ توانائی کے بحران سے نمٹنے کیلئے تعاون کرینگے : عبداللہ گل....ملک کے زیادہ تر مسائل پر قابو پا لیا : زرداری

انقرہ (آن لائن + ایجنسیاں) پاکستان اور ترکی نے تجارت بڑھانے پر اتفاق کیا، صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ ملک کے زیادہ تر مسائل پر قابو پا لیا ہے، ترک صدر عبد اللہ گل کا کہنا ہے کہ پاکستان کو توانائی کے بحران سے نمٹنے کے لئے ہر ممکن تعاون فراہم کریں گے، افغانستان میں امن اور استحکام چاہتے ہیں، پاکستان ترکی دہشت گردی کے خاتمے کے لئے کوشاں ہیں۔ ان خیالات کا اظہار صدر آصف علی زرداری اور عبداللہ گل نے انقرہ کے صدارتی محل میں ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صدر زرداری نے کہا کہ پاکستان ترکی مشترکہ قدروں کے امین ہیں، ترکی آ کر ایسا لگتا ہے کہ اپنے ہی ملک میں ہوں، دونوں ملک مشکل کی گھڑی میں پورے اترے ہیں، پاکستان اور ترکی کی دوستی آئندہ نسلوں کو منتقل کریں گے، ترکی افغانستان میں امن کے لئے اہم کردار ادا کررہا ہے، آئندہ صدی ایشیا کی ہوگی ہم اس کو مد نظر رکھ کر اقدامات کررہے ہیں، علاقائی تجارت کو فروغ دینا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ترکی کی دوستی ہر آزمائش میں پورا اتری ہے، پاکستان افغانستان میں پرامن انتقال اقتدار چاہتا ہے، صدر نے کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو کے قتل ریفرنس کا مقصد انتقام لینا نہیں ہے، صدارتی ریفرنس کا مقصد تاریخ اور قانون کے حوالے کو درست کرنا ہے، پوری دنیا پاکستان کے عدالتی تاریخ سے سیاہ دھبہ ختم کر نے کا انتظار کررہی ہے، صدر نے کہا کہ حکومت نے ملک کو درپیش زیادہ تر مسائل پر قابو پا لیا ہے، پاکستان اور ترکی میں جمہوریت مستحکم ہے، مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ترک صدر عبد اللہ گل نے کہا کہ پرامن افغانستان پورے خطے کے مفاد میں ہے اور پاکستان اور ترکی افغانستان میں امن اور استحکام چاہتے ہیں اور اس کے لئے مربوط کوششیں بھی کررہے ہیں۔ ترکی جنوبی ایشیاءمیں امن و استحکام کے لئے ہر ممکن تعاون فراہم کریگا، پاکستان اور ترکی دہشت گردی کے خاتمے کے لئے کوششیں کررہے ہیں، پاکستان کو توانائی کے بحرانوں سے نمٹنے کے لئے بھی ہر ممکن تعاون فراہم کرنا ہے، مشترکہ پریس کانفرنس سے قبل صدر زرداری اور عبد اللہ گل کے درمیان باضابطہ مذاکرات ہوئے جن میں تعلقات کو مزید فروغ دینے پر بات ہوئی، ملاقات میں تجارتی اور صنعتی شعبوں اور تعلقات بڑھانے پر بھی بات چیت کی گئی، دونوں صدور نے اس عزم کا اظہار کیا کہ دہشت گرد ی کے خاتمے کے لئے مل کر کوششیں کی جائیں گی خطے میں امن و سلامتی کے لئے مل کر کام کیا جائیگا۔ قبل ازیں صدر آصف علی زرداری کے اعزاز میں صدارتی محل میں استقبالیہ تقریب ہوئی ترکی کے صدر نے صدر آصف علی زرداری کا صدارتی محل پہنچنے پر شاندار استقبال کیا۔ اے ایف پی کے مطابق پاکستان اور ترکی نے افغانستان کے استحکام کیلئے طالبان سے ڈائیلاگ سمیت دیگر کوششوں کی حمایت کا اظہار کیا ہے۔ ترک صدر عبداللہ گل نے کہا کہ 2011ء افغانستان کیلئے نہایت اہم سال ہے کیونکہ اس سال غیر ملکی افواج وہاں سے نکلنا شروع ہونگی ہم افغانستان کو متحد رکھنے اور اسکی سالمیت کیلئے تمام صلاحیتیں بروئے کار لا رہے ہیں۔ آئی این پی کے مطابق پاکستان اور ترکی نے دہشت گردی کے خلاف جنگ‘ اقتصادی‘ تجارتی و توانائی سمیت دیگر شعبوں میں تعاون جاری رکھنے پر اتفاق اور علاقائی تجارت کے فروغ اور خطے میں امن و استحکام کیلئے کردار ادا کرنے کے عزم کا اعادہ کیا۔ صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ امید ہے کہ گل ٹرین کے ذریعے پاکستانی مصنوعات کو یورپی منڈیوں تک رسائی ملے گی جس سے پاکستانی مصنوعات کی برآمدات میں اضافہ ہو گا اور ملکی معیشت کو استحکام ملے گا۔ جی این آئی کے مطابق پاکستان اور ترکی نے اپنے برادرانہ تعلقات کو مشترکہ سٹریٹجک مقاصد کے حصول کیلئے نئی بلندیوں تک لیجانے کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک صنعت‘ توانائی‘ مواصلات اور انفراسٹرکچر کے شعبوں میں موجود وسیع مواقع سے بھرپور استفادہ کیلئے مل کر کام کریں گے۔
زرداری / عبداللہ گل