ملک میں بجلی کا بحران جاری، شارٹ فال تین ہزار میگا واٹ سے تجاوز کرنے کے بعد کئی علاقوں میں لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ اٹھارہ گھنٹے تک پہنچ گیا ۔

ملک میں بجلی کا بحران جاری، شارٹ فال تین ہزار میگا واٹ سے تجاوز کرنے کے بعد کئی علاقوں میں لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ اٹھارہ گھنٹے تک پہنچ گیا ۔

ڈیموں میں پانی کی قلت اور گیس فراہمی میں تعطل کے باعث ملک میں بجلی کی پیداوار شدید متاثر ہورہی ہے اور شارٹ فال تین ہزارمیگاواٹ سے بھی تجاوز کر گیا ہے۔ پیداوار اور طلب میں بڑھتے ہوئے فرق نے لوڈ شیڈنگ میں مزید اضافہ کر دیا ہے اور کئی علاقوں میں اٹھارہ گھنٹے تک بجلی بند کی جارہی ہے جس کے نتیجہ میں نظام زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا ہے، لاہور، راولپنڈی، ملتان، فیصل آباد اور رحیم یار خان سمیت تمام چھوٹے بڑے شہروں میں اعلانیہ اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے جبکہ کراچی میں کے ای ایس سی کی جانب سے لوڈ شیڈنگ دورانیئے میں مزید تین گھنٹے اضافہ کرنے کے اعلان پر شدید عوامی رد عمل سامنے آیا ہے، دوسری جانب فیصل آباد میں ٹیکسٹائل کی صنعت بھی شدید متاثر ہوئی ہے اور ہزاروں مزدور بے روزگار ہوگئے ہیں ۔