مسلم لیگ ن نے دوسری مرتبہ عدالت پر حملہ کیا، نواز شریف، زرداری، اسفندیار، فضل الرحمٰن ڈاکو ہیں: عمران

خبریں ماخذ  |  ویب ڈیسک
مسلم لیگ ن نے دوسری مرتبہ عدالت پر حملہ کیا، نواز شریف، زرداری، اسفندیار، فضل الرحمٰن ڈاکو ہیں: عمران

عمران خان نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) دوسری مرتبہ عدلیہ پر حملہ آور ہوئی ہے‘ مسلم لیگ (ن) تمام ریاستی اداروں کو تباہ کرنے پر تلی ہوئی ہے‘ درباری احسن اقبال نے نیب عدالت میں رینجرز کی موجودگی پر اسی لئے ڈرامہ کیا تھا تاکہ عدالت کو غیر محفوظ چھوڑا جائے۔ ٹویٹ میں عمران نے کہا عوام کو ریاستی اداروں کو بچانے کے لئے کھڑا ہونا ہوگا۔ اب پتہ چلا درباری احسن اقبال نے نیب عدالت میں رینجرز کی موجودگی پر ڈرامہ کیوں کیا تھا۔ یہ سب نواز شریف کی تیس ارب سے زائد کی لوٹی ہوئی رقم کو بچانے کے لئے کیا گیا۔ اداروں کی تباہی کا مطلب ریاست کی تباہی ہے اور یہ شریفوں کا ایجنڈا ہے جسے قوم کو ختم کرنا ہے۔ پشاور میں جلسہ عام سے خطاب میں عمران نے کہا کہ زرداری آج کرپشن کی بات کر رہے ہیں، یہ قیامت کی نشانی ہے۔ زرداری کہتے ہیں خیبر پی کے میں بہت زیادہ کرپشن ہے، آصف زرداری 4 دن سے پشاور کے چکر لگا رہے ہیں۔ کارکنوں کے جنون کو دیکھ کر میرا دل خوش ہو گیا ہے، مجھ پر زرداری، ان کی بہن فریال نے ایک ایک ارب روپے ہرجانے کا دعویٰ دائر کیا ہے۔ آصف زرداری تم بہت بڑے ڈاکو ہو، تم پاکستان کی سب سے بڑی بیماری ہو۔ زرداری تم پشاور آئے ہو میں سندھ جا رہا ہوں۔ وہاں خوف کی زنجیریں توڑوں گا۔ نواز شریف اور زرداری جیسے لوگ پیسہ چوری کر کے باہر لے جاتے ہیں۔ خیبر پی کے، سندھ، پنجاب اور بلوچستان میں بھی پی ٹی آئی کی حکوت ہو گی۔ سندھ میں آئندہ حکومت پی ٹی آئی کی ہو گی۔ آصف زرداری کان کھول کر سن لو اگلی حکومت خیبر پی کے میں بھی اور سندھ میں بھی ہماری ہو گی۔ ہر سال ایک ہزار ارب روپیہ منی لانڈرنگ کے ذریعے باہر جاتا ہے۔ نواز شریف کہتے ہیں انہیں کیوں نکالا۔ وہ کہتے ہیں انہیں اقامہ کی وجہ سے نکالا گیا۔ پاکستان کا پیسہ باہر لے جانا نواز شریف کا اقامہ طریقہ ہے۔ نواز شریف کا باہر 300 ارب روپے پڑا ہے۔ قوم ٹیکس دیتی ہے ڈاکو ملک کا پیسہ لے کر باہر لے جاتے ہیں، پوچھتے ہو نا کیوں نکالا، اسی لئے نکالا کہ قوم کا 300 ارب روپے چوری کر کے آپ باہر لے گئے۔ نواز شریف کو سزا ہو جاتی ہے تو ان کا باہر پڑا ہوا 300 ارب روپیہ ضبط ہو کر پاکستان آئے گا۔ یہ اپنا پیسہ بچانے کیلئے اداروں کو بدنام کر رہے ہیں۔ آج انہوں نے عدالت پر ہلہ بول دیا۔ عدالت پر حملہ کرنے کی کوشش کی۔ جج جان بچا کر باہر بھاگا۔ اسلام آباد میں ڈرامہ کیا گیا، یہ ڈرامے جان بچانے کیلئے کر رہے ہیں۔ اب فیصلہ ہو گا کہ قوم چوروں کے نیچے رہے گی یا عظیم قوم بنے گی۔ جب ملک مقروض ہوتا ہے تو دنیا اس کی عزت نہیں کرتی۔ مہنگائی کر کے عوام پر اضافی ٹیکس لگائے جاتے ہیں۔ شاہد خاقان عباسی سن لو، تم ملک کے وزیراعظم ہو یا شریف خاندان کے درباری؟ آج ملک میں غربت اس لئے ہے کہ ہمارے اوپر ڈاکو بیٹھے ہیں۔ پختونوں کے لیڈر کا نام لیتے ہو تو سارے لوگ شور مچاتے ہیں ایزی لوڈ۔ اگر انہوں نے انصاف کا راستہ روکا تو پوری قوم سڑکوں پر آئے گی۔ شاہد خاقان عباسی کی کٹھ پتلی حکومت چلی بھی گئی، جمہوریت نہیں جانے دیں گے۔ مسلم لیگ ن والے سپریم کورٹ کو بدنام کر رہے ہیں، بلوچوں میں پختونوں کا لیڈر اچکزئی بنا ہوا ہے۔ اسفندیار نے کہا کہ کسی کا باپ بھی نواز شریف سے استعفیٰ نہیں لے سکتا۔ زرداری، نواز شریف، اسفندیار ولی، فضل الرحمن سب سے بڑے ڈاکو ہیں، سب سے بڑے مجرم کو 40 گاڑیوں کا پروٹوکول ملتا ہے۔ اسفندیار ولی کی آصف زرداری سے کیا دوستی ہے؟ اسفندیار ولی اور محمود اچکزئی بھی پاکستان کے چور ہیں۔ مریم ائرپورٹ پر یا عدالت سے باہر آ کر ایسے ہاتھ ہلاتی ہیں جیسے ورلڈ کپ جیتا ہو، یہ ملک صرف صادق اور امین کی عزت کرتا ہے، این اے 4 کا الیکشن فیصلہ کن ہو گا، ہم فاٹا اور خیبر پی کے کے انضمام کیلئے پورا زور لگائیں گے۔