ملتان میں سپپڈو بس سروس کا افتتاح‘ نیازی صاحب کو ذاتی مفاد عزیز عوام کی خوشحالی سے غرض نہیں : شہبازشریف

ملتان میں سپپڈو بس سروس کا افتتاح‘ نیازی صاحب کو ذاتی مفاد عزیز عوام کی خوشحالی سے غرض نہیں : شہبازشریف

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیراعلیٰ شہبازشریف نے ملتان میں سپیڈو بس سروس کا افتتاح کیا۔ وزیراعلیٰ نے سپیڈو بس کا معائنہ کیا اور اس میں سوار ہوئے۔ پہلے مرحلے میں ملتان میں11 روٹس پر 100 ائیرکنڈیشنڈ بسیں چلائی جائیں گی۔ شہباز شریف نے خطاب میں کہا کہ میں ملتان کے عوام کو سپیڈو بس سروس کے افتتاح پر مبارکباد دیتا ہوں۔ جنوبی پنجاب کی ترقی و خوشحالی کے جس سفر کا آغاز پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے کیا ہے، اس کا پہلے کبھی کسی نے سوچا تک نہ تھا۔ لوگ جنوبی پنجاب کی بدحالی کی بات کرتے ہیں لیکن ملک کی تاریخ میں وہ کونسی حکومت تھی جس نے اس علاقے کی ترقی کےلئے عملی اقدامات کئے۔ اس کا کریڈٹ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی پنجاب حکومت کو جاتا ہے۔ مشکلات کے باوجود 55 تحصیلوں میں صاف پانی پروگرام کا آغاز کیا جا رہا ہے اور اس سال اس منصوبے کےلئے 24 ارب روپے رکھے گئے ہیں۔ میں یہ کوئی ہندسوں کا گورکھ دھندہ نہیں بتا رہا اور نہ ہی کوئی رام کہانی سنا رہا ہوں۔ یہ سب کچھ آپ اپنی آنکھوں سے دیکھ سکتے ہیں۔ صوبے کے تمام اضلاع میں جدید طبی سہولتوں سے آراستہ ہیپاٹائٹس فلٹر کلینکس بنائے جا رہے ہیں۔ ہم نے لاہور سے جس موٹر بائیکس ایمبولینس سروس کا اجراءکیا ہے، یہ سروس چند ہفتوں میں ملتان بھی آئے گی۔ فےڈر اور مےٹرو بسوں پر سفر کرنے کےلئے” اےک مسافر اےک کارڈ“ کے مسئلہ کے حل کےلئے کمےٹی کام کررہی ہے تاکہ اےک کارڈ پر پورا خاندان سفر کرسکے۔ ملتان میں نشتر ہسپتال 2 بنانے کا فیصلہ کیا ہے اور اس منصوبے پر اسی سال کام کا آغاز کر دیا جائے گا۔ لاہور، راولپنڈی، اسلام آباد مےٹروبس کے بعد پورے پاکستان مےں اگر کہےں مےٹروبس کامنصوبہ لگاہے تو وہ ملتان ہے۔ اےسا عظےم الشان منصوبہ نہ کراچی نہ پشاور اور نہ ہی ملک کے کسی اور حصے مےں ابھی تک لگا ہے۔ لاہور مےں سال 2013ءکے اوائل مےں مےٹروبس کا منصوبہ مکمل ہوا تو پی ٹی آئی کے پےٹ مےں مروڑ اٹھ رہے تھے کہ لاہور مےں کےوں عام شہرےوں کےلئے شاندار مےٹروبس بنائی جارہی ہے۔ قرض خور اور سےاسی بنےادوں پر اربوں روپے کے قرضے معاف کرانے والے ،غرےب عوام کی بےنکوں مےں جمع کرائی گئی پونجی لوٹنے والے جن مےں جنوبی پنجاب کے بعض لوگوں کے نام شامل ہے۔ ےہ مٹھی بھر اشرافےہ مےٹروبس منصوبے کی شدےد مخالفت کررہی تھی۔ پی ٹی آئی کے چےئرمےن اور ان کے نےاز مندوں نے اس عوامی منصوبے کو جنگلہ بس کہا اور اس پر 70ارب روپے خرچ ہونے کا بے بنےاد پراپےگنڈا کےا جس کا وہ آج تک کوئی ثبوت نہےں دے سکے۔ مےں ہمےشہ سے کہتا رہا ہوں کہ مےٹروبس کے اس منصوبے پر 30ارب روپے سے اےک دھےلا زےادہ خرچ نہےں ہوا ہے۔ دوسری جانب نےازی صاحب نے 2014ءمےں ملک کی ترقی کا سفر روکنے کےلئے دھرنا دےا۔ قوم کے قےمتی 7ماہ ضائع کر کے ملک کا نظام درہم برہم کےا اور قومی معےشت کو بے پناہ نقصان پہنچاےا۔ ستمبر2014ءمےں چےنی صدر نے پاکستان مےں سی پےک کے معاہدوں پر دستخط کرنے کےلئے آنا تھا لےکن پی ٹی آئی کی ضد اور ہٹ دھرمی کے باعث ےہ دورہ تاخےر کا شکار ہوا۔پی ٹی آئی کے چےئرمےن کی ضد کے باعث ترقی و خوشحالی کے 7ماہ برباد ہوئے۔ اگرچےن کے صدر کا دورہ 2014ءمےں ہوجاتا تو کئی اےک منصوبے آسمان کی بلندےوں کو چھو رہے ہوتے۔ نےازی صاحب کو عوام کی ترقی و خوشحالی سے کوئی غرض نہےں انہےں صرف اپنا ذاتی مفاد عزےز ہے۔ اسی لئے انہوں نے ملک وقوم کی ترقی کی مخالفت کی۔لاہور اورنج لائن مےٹروٹرےن کی مخالفت بھی اسی گروپ نے کی اور پھر خود 2014ءمےں پشاور مےں مےٹروکا اعلان کردےا۔ جو لوگ پشاور مےں کچھ نہ کرسکے وہ پنجاب کے عوام کے فلاحی منصوبوں مےں رکاوٹےں ڈال رہے ہےں۔ مےں پشاور کے غےور بہن بھائےوں سے کہتا ہوں کہ اگر کے پی کے مےں مسلم لےگ (ن) کی حکومت ہوتی تو 11ماہ مےں پشاور مےں بھی مےٹروبس کا منصوبہ لگا دےتے۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی پنجاب کے عوام کی ترقی مجھے دل و جان سے عزےز ہے اور اس خطے کی ترقی وخوشحالی کےلئے اقدامات کرتے رہےں گے۔ شہبازشریف نے گورنمنٹ رجب طیب اردگان ہسپتال مظفرگڑھ کے توسیعی منصوبے کا اچانک دورہ کےا۔ وزیراعلیٰ کی ہسپتال مےں اچانک آمد پر ہسپتال کے عملے اور مزدوروں کو خوشگوار حیرت ہوئی۔ وزےراعلیٰ نے ہسپتال کے مختلف وارڈز مےں جاکر مرےضوں کی فرداً فرداً عےادت کی۔ وزےراعلیٰ نے گاو¿ن نہ پہننے پر اےم اےس کی سرزنش کی اور کہاکہ اتنے شاندار ہسپتال مےں گاو¿ن نہ پہن کر ڈےوٹی کرنا کسی صورت قابل قبول نہےں۔ علاوہ ازیں محکمہ صحت پنجاب حکومت اور انٹرنیشنل دوا ساز کمپنی کے مابین مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کئے گئے اور اس معاہدے سے کینسر کے مریضوں کو علاج معالجہ کی سہولت ملے گی- معاہدے کی رو سے کینسر کے مرض میں مبتلا مریضوں کے علاج معالجے پر آئندہ پانچ سالوں میں 44 ارب روپے خرچ ہوں گے جس میں سے4 ارب 40 کروڑ روپے پنجاب حکومت جبکہ 39 ارب60 کروڑ روپے انٹرنیشنل ادویہ ساز کمپنی فراہم کرے گی اور اس پروگرام سے 9 ہزار کینسر کے مریض مستفید ہوں گے- شہباز شریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت اور انٹرنیشنل دوا ساز کمپنی کے مابین طے پانے والے معاہدہ خوش آئند ہے اور اس سے کینسر کے مریضوں کو بے پناہ فائدہ ہو گا- یہ انقلابی پروگرام ہے جس کے دور رس اثرات مرتب ہوں گے- شہریوں کو بہتر علاج معالجہ اور تعلیمی سہولیات کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے - اگر ریاست یہ نہیں کرسکتی تو وہ پھر کس کام کی ہے - عوام کو اگر آج علاج اور تعلیم کی سہولتیں میسر نہیں ہیں تو اس کی وجہ اربوں ، کھربوں روپے کی کرپشن ہے - کاش غریب قوم کے وسائل پر ڈاکہ نہ ڈالا جاتا اور قومی وسائل کو بے دردی سے نہ لوٹا جاتا تو آج ملک کے ہر شہری کو بہترین تعلیم اور علاج کی سہولتیں میسر ہوتیں- دور آمریت، اس کی کٹھ پتلی حکومتوں اور بعد میں آنے والی حکومتوں نے ملک میں بجلی نہ ہونے کی بنا پر اندھیرے پھیلائے اور ملک کو مسائل اور بحرانوں میں دھکیلا- شہباز شریف نے قدرتی آفات سے آگاہی اور بچاﺅ کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام کہا ہے کہ قدرتی آفات سے آگاہی کے عالمی دن کا مقصدعوام کو احتیاطی تدابیر اور بچاﺅ کے طریقہ کار سے آگاہ کرنا ہے۔ اس دن کا بنیادی مقصد شہریوں کو قدرتی آفات کی صورت میں اپنی مدد آپ کرنے کے قابل بنانا ہے۔
شہباز شریف