پشاور: نیٹو کے ٹرمینل پر 6 راکٹ فائر آگ لگ گئی 2 جاں بحق فوج کا کنٹرول

پشاور: نیٹو کے ٹرمینل پر 6 راکٹ فائر آگ لگ گئی 2 جاں بحق فوج کا کنٹرول

ہنگو+ پشاور+ سوات (مانیٹرنگ ڈیسک+ ایجنسیاں) مزاحمت کاروں نے پشاور کے قریب پشین خرہ میں نیٹو کیلئے اسلحہ لے جانے والے کنٹینرز کے ترمینل پر 6راکٹ فائر کئے جس کے باعث ٹرمینل کے ایک حصے کو آگ لگ گئی وہاں پر موجود سکیورٹی فورسز‘ لوگوں اور مزاحمت کاروں میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا‘ شدید فائرنگ پر حملہ آور فرار ہوگئے۔ ادھر ہنگو میں تین روز کی جھڑپوں کے بعد ہونے والا امن معاہدہ چند گھنٹوں بعد ہی ناکام ہو گیا اورمتحارب گروپوں نے ایکدوسرے پر فائرنگ کر دی جس سے مزید 2 افراد جاںبحق ہو گئے‘ جبکہ گن شپ ہیلی کاپٹروں کی شیلنگ سے 4 افراد زخمی بھی ہوئے‘ فائرنگ کے بعد مسلح افراد نے 2 مارکیٹوں کو لوٹ کر آگ لگا دی ‘ کشیدہ حالات پر قابو پانے کے لئے فوج نے ہنگو کا کنٹرول سنبھال لیا ہے۔ ہنگو میں اتوار اور پیر کی درمیانی شب ایک بجے سے فائر بندی پر عمل ہونا تھا لیکن پیر کی علی الصبح فریقین نے ایک دوسرے کے ٹھکانوں پر حملہ کر دیا حکام کی طرف سے لائوڈ سپیکروں سے بار بار اعلانات کے باوجود فائرنگ کا سلسلہ جاری رکھا گیا۔ دوسری طرف میرانشاہ میں مزاحمت کاروں نے امریکہ کے لئے جاسوسی کے الزام میں 2 بھائیوں کو قتل کر دیا‘ علاوہ ازیںسوات میں مزاحمت کاروں نے ایک ہفتے کے لئے غیر اعلانیہ فائر بندی کا اعلان کر دیا ہے جبکہ 2 افراد کو قتل کردیا گیا۔ تحریک طالبان سوات کے ترجمان مسلم خان نے سوات میں یکطرفہ طور پر فائر بندی کی تردید کی ہے۔ دریں اثناء مہمند ایجنسی میں فورسز نے مزاحمت کاروں کے خلاف آپریشن جاری رکھا۔ اس دوران ایک گھر پر گولہ گرنے سے میاں بیوی جاں بحق ہوگئے۔ ۔ ادھر مینگورہ شہر میں بدستور کرفیو نافذ ہے۔ جبکہ مینگورہ میں کاسمیٹکس بنانے والی فیکٹری میں آگ لگ گئی۔ کوہاٹ میں ایک راکٹ سکول کے قریب گرنے سے زور دار دھماکہ ہوا ہے تاہم کوئی نقصان نہیں ہوا۔