’’تنازع کشمیر سے توجہ ہٹانے کیلئے بھارت نے دہشتگردی کا ڈرامہ رچایا‘‘

لاہور (لیڈی رپورٹر) سیاسی ومذہبی جماعتوں کی خواتین رہنمائوں نے اقوام متحدہ کی ہدایت پر جماعت الدعوۃ کے دفاتر سیل کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کو یک طرفہ طور پر بیرونی دنیا کے احکامات ماننے کی روش کو تبدیل کردینا چاہئے۔ سینیٹر ڈاکٹر کوثر فردوس اور جماعت اسلامی کی رہنما سمیحہ راحیل قاضی نے کہا کہ ہم بھارت کے مطالبہ پر اقوام متحدہ کے فیصلہ کی بھرپور مذمت کرتے ہیں۔ مسلم لیگ (ن) ممبر قومی اسمبلی نگہت پروین میر نے کہا کہ محض بھارت کے مطالبہ پر ملک کی کسی جماعت کے دفاتر سیل کردینا غلط اقدام ہے۔ جماعت اسلامی کی رہنما عافیہ سرور نے کہا کہ جماعت کیخلاف ثبوت کو منظر عام پر لایا جائے۔ پیپلز پارٹی ممبر صوبائی اسمبلی عظمیٰ بخاری نے کہا کہ یو این او کا ممبر ہونے کی حیثیت سے پاکستان کیلئے اقوام متحدہ کا فیصلہ ماننا لازمی ہے۔ مسلم لیگ (ق) ممبر صوبائی اسمبلی آمنہ الفت نے کہا ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں ظلم وبربریت پر عالمی برادری کی توجہ ہٹانے کیلئے دہشت گردی کا ڈرامہ رچایا ہے۔ پیپلز پارٹی ممبر صوبائی اسمبلی عظمیٰ بخاری مسلم لیگ (ن) ممبر صوبائی اسمبلی عارفہ پرویز خالد نے کہا کہ پاکستان کو بھارت سے ڈرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ موجودہ صورتحال سے نکلنے کیلئے نئی پالیسیاں بنانی چاہئیں۔