اقوام متحدہ بھارت کیخلاف قراردادیں کیوںمنظور نہیں کرتا: مہناز رفیع

لاہور (لیڈی رپورٹر) پاکستان مسلم لیگ کی ہیومن رائٹس کمیٹی کی چیئرپرسن مہناز رفیع نے کہا ہے کہ انسانی حقوق کا پہلی بار عملی نمونہ اسلام نے 14سو سال پہلے پوری دنیا کے سامنے پیش کیا۔ آج بھی مغرب کا انسانی حقوق کا تصور تعصب اور دوہرے سیاسی و سماجی رویوں پر مبنی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی ہیومن رائٹس کمیٹی نے یکطرفہ طور پر پاکستان کے خلاف قرارداد منظور کر کے بذات خود انسانی اخلاقیات اور حقوق کی خلاف ورزی کی ہے۔ ناانصافی اور تعصب پر مبنی عالمی رویہ ہے جو بعدازاں وسیع پیمانے پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور دہشت گردی کا سبب بنتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں پر ظلم کرنے کے ساتھ ساتھ بھارت کے اندر موجود اقلیتوں کی وسیع پیمانے پر توہین کر رہا ہے۔ اس رویے کے خلاف اقوام متحدہ والے کوئی مذمتی قرارداد پیش نہیں کرتے۔ انہوں نے کہا کہ خوفزدہ حکمرانوں کے اس رویے سے پاکستان کے عوام خود کو غلامی کی زنجیروں میں جکڑا ہوا محسوس کر رہے ہیں۔