ولید کی بیٹی ملک بدر, سعودی شہزادوں کی گرفتاری، تیاری پہلے سے کی گئی، میٹنگ کا کہ کر پکڑا گیا: مغربی میڈیا

خبریں ماخذ  |  ویب ڈیسک
ولید کی بیٹی ملک بدر, سعودی شہزادوں کی گرفتاری، تیاری پہلے سے کی گئی، میٹنگ کا کہ کر پکڑا گیا: مغربی میڈیا

سعودی عرب میں شہزادوں اور وزرا ء کی گرفتاری کے معاملے پر مغربی میڈیا نے اندرونی کہانی سامنے لانے کا دعویٰ کیا ہے جس میں کہا گیا گرفتاریوں کی تیاری پہلے سے کرلی گئی تھی اور ہوٹل میں بکنگ کرائی گئی تھی۔مغربی میڈیا کے مطابق ریاض کے فائیو سٹار ہوٹل ریٹز کارلٹن نے 4 نومبر کو اپنے مہمانوں کو خط لکھا، جس میں کہا گیا مقامی حکام کی جانب سے غیر متوقع بکنگ کرائی گئی ہے، حالات نارمل ہونے تک مہمانوں کو ٹھہرایا نہیں جاسکے گا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ہوٹل کی جانب سے خط ملنے والے افراد کو حالات کی شراکت کا احساس ہو گیا تھا کیونکہ ہوٹل انتظامیہ نے پہلے ہی صفائی مہم شروع کررکھی تھی، یوں چند گھنٹوں بعد ہی اہم شخصیات کو دھر لیا گیا۔مغربی میڈیا کے دعویٰ کے مطابق بعض شہزادوں اور دیگر افراد کو میٹنگ کا کہہ کر اور دیگر کو گھروں سے حراست میں لیا گیا، شہزادہ مطعب ریاض میں فارم ہاوس میں تھے، انہیں ولی عہد سے میٹنگ کا کہہ کر بلایا گیا، گھر والوں کو صرف ایک مختصر کال کرنے کی اجازت دی گئی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق زیادہ تر سیاسی اور بزنس شخصیات کی گرفتاری ریاض اور جدہ سے ہوئی۔ گرفتار افراد کو مختلف مقامات سے جہازوں اور گاڑیوں میں لا کر عارضی جیل ریاض کے فائیوسٹار ہوٹل منتقل کیا گیا، زیر حراست افراد کو اب فون کی اجازت نہیں ہے اور ہوٹل میں کوئی شخص آ جا نہیں سکتا۔مغربی میڈیا کے مطابق خبر پر شاہی عدالت کی جانب سے فوری تبصرہ سامنے نہیں آسکا ہے۔سعودی شہزادے ولید بن طلال کی 21 سالہ بیٹی کو گرفتار کرکے ملک بدر کر دیا گیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کی جانب سے دعوی کیا گیا ہے کہ سعودی شہزادے ولید بن طلال کی 21 سالہ بیٹی کو گرفتار کرکے ملک بدر کر دیا گیا ہے۔