رجسٹرارسپریم کورٹ کی صدارت میں ہونے والے ایک اہم اجلاس کے دوران کہا گیا ہے ملک بھر کی عدالتوں میں زیرالتواء کیس اکتیس جولائی تک نمٹا دیئے جائیں گے۔

رجسٹرارسپریم کورٹ کی صدارت میں ہونے والے ایک اہم اجلاس کے دوران کہا گیا ہے ملک بھر کی عدالتوں میں زیرالتواء کیس اکتیس جولائی تک نمٹا دیئے جائیں گے۔

جوڈیشیل پالیسی پر عمل درآمد کا جائزہ لینے کے لئے یہ اہم اجلاس اسلام آباد میں ہوا۔ اجلاس میں رجسٹرارشرعی عدالت و ہائی کورٹس اورصوبائی پراسیکیوٹرزجنرل کے علاوہ چاروں صوبوں کے آئی جی جیل خانہ جات نے بھی شرکت کی۔ اس موقع پر ڈاکٹر فقیر حسین کا کہنا تھا کہ زیرالتواء تمام مقدمات پندرہ روزکے اندر، اندر نمٹا دیئے جائیں گے۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ گزشتہ ماہ پنجاب کی کئی ضلعی عدالتوں میں پچیس ہزارسے زیادہ پرانے کیسز نمٹا دیئے گئے ہیں اورباقی کا جلد فیصلہ ہوجائے گا۔ تمام صوباٰئی ہائی کورٹس کے رجسٹرارزنے اس عزم کا اظہارکیا کہ زیرالتواء مقدمات اکتیس جولائی تک نمٹا دیئے جائیں گے۔ اس موقع پربلوچستان ہائی کورٹ کے رجسٹرار کا کہنا تھا کہ ان کے صوبے میں یہ کام چھ ماہ میں مکمل ہوگا۔
زیرالتواء تمام مقدمات پندرہ روزکے اندر، اندر نمٹا دیئے جائیں گے۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ گزشتہ ماہ پنجاب کی کئی ضلعی عدالتوں میں پچیس ہزارسے زیادہ پرانے کیسز نمٹا دیئے گئے ہیں اورباقی کا جلد فیصلہ ہوجائے گا۔ تمام صوباٰئی ہائی کورٹس کے رجسٹرارزنے اس عزم کا اظہارکیا کہ زیرالتواء مقدمات اکتیس جولائی تک نمٹا دیئے جائیں گے۔ اس موقع پربلوچستان ہائی کورٹ کے رجسٹرار کا کہنا تھا کہ ان کے صوبے میں یہ کام چھ ماہ میں مکمل ہوگا۔