اکیلا بدلہ لے سکتا ہوں لیکن قوم کو طالبان کیخلاف متحد کروں گا: بلاول

اکیلا بدلہ لے سکتا ہوں لیکن قوم کو طالبان کیخلاف متحد کروں گا: بلاول

کراچی (نوائے وقت نیوز + ایجنسیاں) چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کالعدم تحریک طالبان نے میری والدہ کو شہید کیا، قوم کو طالبان کے خلاف متحد کر کے بدلہ لوں گا، تمام سیاستدان طالبان کے خلاف آواز اٹھائیں تو میری جان کو اتنا خطرہ نہ ہو۔ ٹوئٹر پر پیغام میں انہوں نے کہا کالعدم تحریک طالبان نے میری والدہ کو شہید کیا، میں چاہوں تو اس کا بدلہ ان سے لے سکتا ہوں، لیکن میں ایسا نہیں کروں گا، ملک کو طالبان کے خلاف متحد کر کے ان سے بدلہ لوں گا۔ انہوں نے کہا دہشت گردوں نے انفرادی آواز بلند کرنے والے افراد کو مار دیا۔ چودھری اسلم، سلمان تاثیر، شہباز بھٹی، بشیر بلور اور بینظیر بھٹو کو اسی لئے قتل کیا گیا۔ بلاول بھٹو کا کہنا ہے ہم سب متحد ہو جائیں تو دہشت گرد ہمارا کچھ نہیں بگاڑ سکتے، ہمیں دہشت گردوں کے خلاف ہم آواز ہونا پڑے گا۔ میں کالعدم تحریک طالبان کے خلاف پورے ملک کو متحد کروں گا۔ آن لائن کے مطابق انہوں نے کہا طالبان کیخلاف انفرادی طور پر آواز اٹھانے والوں کو مار دیا جاتا ہے۔ میں چاہوں تو طالبان سے اکیلا بدلہ لے سکتا ہوں لیکن طالبان کیخلاف پوری قوم کو یک زبان ہو کر آواز اٹھانی ہو گی انفرادی طور پر آواز اٹھانے والوں کو رد کر دیا جاتا ہے اجتماعی طور پر آواز اٹھائیں تو طالبان ہمیں نہیں مار سکتے۔ اے این این کے مطابق انہوں نے کہا ملک میں ان سے زیادہ کسی بھی سیاستدان کی جان کو خطرات لاحق نہیں لیکن اس کے باوجود وہ دہشت گردوں کے خلاف آواز بلند کرتے ہیں اس لئے دیگر سیاست دانوں کو بھی بہادری کا مظاہرہ کر کے ان عناصر کے بارے میں بات کرنا ہو گی۔ دہشت گردوں نے ان کی ماں کو شہید کیا ہے اور دہشت گردوں کے قانون کے مطابق انہیں بھی جان لینے کا حق ہے لیکن وہ ان سے اس سے بھی بہتر انداز میں انتقام لیں گے اور وہ یہ کہ طالبان کے خلاف قوم کو متحد کریں گے۔