وقت آنے پر ہزارہ کو صوبے کا درجہ دلوائیں گے‘ لٹیروں سے پیسے واپس لیکر عوام پر خرچ کئے جائیں : نوازشریف

مانسہرہ (ریڈیو نیوز + وقت نیوز + جی این آئی) مسلم لیگ (ن) کے قائد نوازشریف نے کہا ہے کہ وقت آنے پر ہزارہ کو صوبے کا درجہ دلوائیں گے۔ سیاست نہیں متاثرین کی مدد کرنے خیبر پی کے آیا ہوں‘ صدر آصف زرداری بیرونی دوروں کی بجائے سیلاب متاثرین کی مدد کریں‘ خیبر پی کے کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کے دورے کے موقع پر پٹن میں متاثرین سے خطاب اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت بھی خیبر پی کے متاثرین کی مدد کرے گی۔ اس وقت حکمرانوں کو غیر ملکی دوروں کی بجائے تمام وسائل سیلاب سے متاثرہ عوام کے جان و مال کے تحفظ اور ان کی امداد پر صرف کرنے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام کے پیسے لوٹنے والوں سے واپس لے کر ان پیسوں کو عوام کی بہتری کے لئے خرچ کیا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) اور پنجاب حکومت سیلاب سے متاثرہ عوام کے لئے ہرممکن کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہزارہ کے عوام کے جذبات کا احساس ہے او وقت آنے پر ہزارہ کو صوبہ کا درجہ دلوائیں گے۔ نوازشریف نے کہا کہ کوہستا ن سیلاب سے شدید متاثر ہوا ہے‘ حکومت کوہستان کے عوام کی امداد پر فوری توجہ دے۔ نوازشریف نے سیلاب کے باعث جاںبحق ہونے والے افراد کے اہل خانہ سے تعزیت کے دوران یقین دلایا کہ کوہستان میں سیلاب سے متاثر ہونے والے افراد کے لئے جو ممکن ہوا کریں گے‘ انہوں نے سیلاب کی وجہ سے چینی باشندوں کے جاںبحق ہونے پر دکھ کا اظہار کیا۔این این آئی کے مطابق نواز شریف نے کوہستان میں واپڈا کی طرف سے عوام کو وارننگ دیئے بغیر پانی چھوڑنے سے ہونیوالے جانی ومالی نقصان پر سخت دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس واقعہ کے ذمہ دار واپڈا حکام کیخلاف حکومت فوری کارروائی کرے، انہوں نے کہا کہ اگر مرکز میں میری حکومت ہوتی تو میں واپڈا کے ذمہ داروں کیخلاف فوراً کارروائی کرتا جن کی وجہ سے یہ لوگ مارے گئے ہیں پتہ نہیں اب تک یہاں کیوں کوئی نہیں آیا۔ صدر ،وزیراعظم اور وفاقی حکومت میں سے کسی نے توجہ نہیں دی۔