سندھ اسمبلی میں لاؤڈ سپیکر کے بے جا استعمال کے خلاف بل پاس

سندھ اسمبلی میں لاؤڈ سپیکر کے بے جا استعمال کے خلاف بل پاس

سندھ اسمبلی کا اجلاس آغا سراج دارنی کی زیرصدارت ہوا، وقفہ سوالات کے دوران وزیر محکمہ ورک اینڈ سروسز میر ہزار خان بجارانی سوالات کے تسلی بخش جواب نہیں دئیے، سندھ ہاؤس اسلام آباد میں کمرے الاٹ نہ کیے جانے پر ارکین  نے شدید احتجاج کیا،جبکہ سندھ ہاؤس کی حالت زار کے خلاف اسپیکرسندھ اسمبلی نے بھی شکایات کے انبارلگا دیے۔
اس دوران وزیر جیل خانہ جات منظور وسان نے فنکشنل لیگ کے اراکین پر تنقید کر کے ایوان کا ماحول گرما دیا،سپیکر آغاسراج درانی نے شور مچانے پر  ن لیگ کے اراکین اعجاز شاہ شیرازی اور امیرحیدر شاہ کو ڈانٹ پلا دی-
ڈاکٹر سکندر میندھرو نے کہا کہ صوبے میں لاؤڈ اسپیکر کا غلط استعمال روکنا چاہیئے،شرجیل میمن کا کہنا تھاکہ متنازعہ گفتگو صرف لاؤڈ اسپیکر پر نہیں مختلف ٹی وی چینلز پر نشر ہونے والے پروگرامز کے ذریعہ بھی کی جارہی ہے-
ایوان میں سندھ ساؤنڈ سسٹم قواعد و ضوابط بل دوہزار پندرہ متفقہ طورپرمنظورکرلیا گیا، لاؤڈ اسپیکرکے غلط استعمال پرچھ ماہ قید اورپچاس ہزارروپے جرمانہ ہوگا،
اسمبلی سیشن کے دوران سندھ مینٹل ہیلتھ ترمیمی بل،اسمبلی میں سرکاری ملازمین کا ترمیمی بل، سندھ کوسٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی ترمیمی بل بھی منظور کیا گیا، جبکہ سندھ کوسٹل ڈویلیپمنٹ اتھارٹی ترمیمی بل دوہزارپندرہ بھی متفقہ طورپرمنظورکرلیاگیا۔