دہشت گردوں کیخلاف آپریشن کامیابی سے جای، بے گھر افراد کی بحالی اہم چیلنج ہے ،ملکی استحکام کے لئے تمام سیاسی جماعتوں میں تعاون بڑھنا چاہئے: نوازشریف

دہشت گردوں کیخلاف آپریشن کامیابی سے جای، بے گھر افراد کی بحالی اہم چیلنج ہے ،ملکی استحکام کے لئے تمام سیاسی جماعتوں میں تعاون بڑھنا چاہئے: نوازشریف

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی+ نوائے وقت رپورٹ + نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ حکومت قومی معاملات پر سیاسی مشاورت کا مکمل ادراک رکھتی ہے ملک کی داخلی صورتحال اور سیاسی مسائل پر بھرپور توجہ ہے ہر وہ اقدام اٹھانے کو تیار ہیں جن سے جمہوری و سیاسی قوتیں مزید مضبوط ہوں۔ پوری قوم کی مدد سے شمالی وزیرستان ایجنسی کے بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی اور علاقے کی تعمیر کو یقینی بنایا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پارٹی رہنما سرانجام خان سے ملاقات میں کیا۔ ملاقات میں قومی صورتحال اور سیاسی مسائل پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ خیبر پی کے کی سیاسی صورتحال، شمالی وزیرستان ایجنسی کے متاثرین سے متعلق امدادی سرگرمیوں وفاق اور صوبوں کے تعلقات کار کو مزید فروغ دینے کے سلسلے میں وفاقی حکومت کے مزید ممکنہ اقدامات پر بات چیت ہوئی۔ وزیراعظم نے سیاسی مسائل اور قومی معاملات پر مشاورت کے لئے سب کو ساتھ لے کر چلنے کے عزم کا اعادہ کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ اس اہم نازک موقع پر جبکہ شمالی وزیرستان ایجنسی میں دہشت گردوں کے خلاف کامیابی سے آپریشن ہو رہا ہے اور بے گھر افراد کی بحالی و آبادکاری کا اہم چیلنج ہے تمام سیاسی جماعتوں میں ملکی استحکام کے لئے تعاون بڑھنا چاہئے۔ اس حوالے سے حکومت کو اپنی ذمہ داری کا مکمل احساس ہے۔ قومی معاملات اور سیاسی مسائل کے حوالے سے سب سے بات چیت کے لئے تیار ہیں۔ وفاقی حکومت سے جو ممکن ہو گا بے گھر افراد کے لئے کرے گی۔ دریں اثنا وزیراعظم سے وزیر داخلہ چودھری نثار نے ملاقات کی۔ ملاقات میں قومی داخلی سلامتی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات میں شمالی وزیرستان میں جاری آپریشن ضرب عضب پر بھی مشاورت کی گئی۔ وزیر داخلہ نے وزیراعظم کو اسلام آباد کی سکیورٹی پر بریفنگ دی۔ رینجرز اور پولیس پر مشتمل فورس تشکیل دینے کے معاملے سے بھی آگاہ کیا۔ وزیراعظم نے وزیر داخلہ کو وزیرستان آپریشن کے ردعمل میں ممکنہ کارروائی روکنے کیلئے صوبوں سے کوآرڈینیشن کی ہدایت کی ہے۔ ملاقات میں تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے احتجاجی پروگراموں کو سیاسی طور پر نمٹنے کا فیصلہ کیا گیا۔ ثناءنیوز کے مطابق نواز شریف نے واضح کیا ہے کہ کابینہ اور پارٹی دونوں کے نظم و ضبط پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جا سکتا۔ وزیراعظم نے اس ضمن میں وفاقی وزراءمیں مزید ہم آہنگی پر زور دیا ہے۔ قومی سلامتی کی داخلی پالیسی پر عملدرآمد کیلئے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کو تمام ممکنہ اقدامات کی ہدایت کر دی ہے۔ وزیراعظم نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے عوام کے مسائل حل کرنے کا تہیہ کر رکھا ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے دیرینہ کارکن پارٹی کا اثاثہ ہیں، جمہوریت کی بحالی کیلئے کام کرنے والے کارکنوں کو پارٹی میں بلند مقام دیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق سرانجام خان جو پچھلے چند سالوں سے پارٹی امور پر اختلافات کی وجہ سے گوشہ نشین ہو گئے تھے ان کی وزیراعظم محمد نواز شریف سے صلح ہو گئی ہے۔ ان کے صلح کرانے میں سعود مجید کا اہم کردار ہے۔ وزیراعطم نے سرانجام کو پارٹی میں فعال کردار ادا کرنے کی ہدایت بھی کی۔ ذرائع کے مطابق سرانجام کو پارٹی میں دوبارہ اہم عہدے دیئے جانے کا امکان ہے۔ وزیراعظم نے کہا حکومت ملک کی داخلی صورتحال اور سیاسی مسائل پر بھرپور توجہ دے رہی ہے۔ حکومت جمہوری و سیاسی قوتوں کو مزید مضبوط بنانے کیلئے ہر اقدام اٹھائے گی۔ ترجمان وزیراعظم ہاﺅس کے مطابق وزیر محنت راجہ اشفاق سرور نے بھی وزیراعظم سے ملاقات کی۔ آئی این پی کے مطابق وزیراعظم محمد نواز شریف نے شمالی وزیرستان سے نقل مکانی کرنے والے افراد کےلئے مزید ایک ارب روپے جاری کرنے کاحکم دیتے ہوئے وزارت سیفران اور دوسرے متعلقہ محکموں کوآئی ڈی پیز کی بحالی کا عمل تیز کرنے کی ہدایت کی ہے۔ وزیراعظم کی جانب سے مزید ایک ارب روپے کی رقم جاری کرنے کے حکم کے بعد اب تک مجموعی طور پر جاری ہونے والی رقم ساڑھے چار ارب روپے ہوگئی ہے ۔ دریں اثناءوزیر خزانہ اسحق ڈار سے ملاقات میں وزیراعظم نے نقل مکانی کرنے والے افراد کی مشکلات کم کرنے کیلئے تمام ممکنہ اقدامات کی ہدایت کی۔ ملاقات میں وزیرخزانہ نے نقل مکانی کرنے والوں کےلئے جاری کئے گئے فنڈز کے بارے میں بھی بتایا۔ وزیراعظم نے ملک سے دہشت گردی کے مکمل خاتمے تک عسکریت پسندوں کے خلاف آپریشن جاری رکھنے کا عزم ظاہر کیا۔ وقائع نگار کے مطابق وزیراعظم محمد نواز سے لاہور میں ملاقاتوں کے بعد وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان کی اسلام آباد میں پہلی ملاقات تھی جس میں وزیراعظم نے چودھری نثار علی خان کو عمران خان کے لانگ مارچ سے نمٹنے کا ٹاسک دیا۔ وزیراعظم نے اسلام آباد سمیت ملک بھر میں صوبوں سے مل کر سکیورٹی کا فول پروف نظام وضع کرنے کی ہدایت کی۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم نواز شریف اور وزیر داخلہ چودھری نثار کی ملاقات میں وزارت داخلہ میں اہم تبدیلیاں لائی جائیں گی۔ نثار علی خان نے وزیراعظم کو یقین دلایا کہ لانگ مارچ سمیت ہر احتجاج سے قانون کے تحت نمٹا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ نے مسلم لیگ (ن) کو مخالف سیاسی جماعتوں کی یلغار روکنے کیلئے متحرک کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔