فاٹا سینیٹ الیکشن کے حوالے سے صدارتی آرڈیننس کو تین روز گزر گئے ، قبائلی ارکان حکومت سے ناراض

خبریں ماخذ  |  خصوصی نامہ نگار
فاٹا سینیٹ الیکشن کے حوالے سے صدارتی آرڈیننس کو  تین روز گزر گئے ،  قبائلی ارکان حکومت سے ناراض

 سینٹ الیکشن پر بننے والا صدارتی آرڈیننس  گھمبیر صورتحال اختیار کرگیا۔ ایک جانب چھ ناراض اراکین اسلام آباد ہائیکورٹ پہنچ گئے اور حکومتی جرگہ بھی فاٹا اراکین کو صدارتی آرڈیننس پر انتخاب لڑنے پر قائل نہ کرسکا ۔جبکہ الیکشن کمیشن نے بھی صدارتی آرڈیننس میں قانونی سقم کی نشاندہی کی ۔اور اس کے دور ہونے تک الیکشن نہ کرانے کا فیصلہ کیا ہے ۔فاٹا کے ناراض رکن ساجد حسین طوری کا کہنا ہے حکومت شکست دیکھتے ہوئے راتوں رات آرڈیننس لے آئی ۔
حکومت ایک جانب صدارتی آرڈیننس اجراءکے بعد فاٹا ارکان کو منانے میں مصروف ہے تو دوسری جانب چیئرمین سینیٹ کے انتخاب کےلئے اسے اپوزیشن جماعتوں سے ٹف ٹائم مل رہاہے ایسے حالات میں کیا 11مارچ سے قبل فاٹا سینیٹ نشستوں پر انتخاب ہوپائے گایہ وفاقی حکومت کےلئے ایک بڑا سوال ہے-