بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت کہنا خطرناک، ٹرمپ کی لندن آمد پر مظاہرے ہونگے: میئر لندن

بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت کہنا خطرناک، ٹرمپ کی لندن آمد پر مظاہرے ہونگے: میئر لندن

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی+ سٹاف رپورٹر+ سپیشل رپورٹ) وفاقی وزیر تجارت پرویز ملک نے کہا ہے کہ برطانوی سرمایہ کاروں کے لئے پاکستان میں سرمایہ کاری کے بہترین مواقع موجود ہیں‘ لندن کے میئر کو پاکستان میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتا ہوں‘ میئر لندن صادق خان نے کہا کہ پاکستان اور لندن کے درمیان دیرینہ تعلقات ہیں‘ لندن میں تمام مذاہب کو یکساں آزادی اور احترام حاصل ہے۔ جمعرات کو پرویز ملک اور میئر لندن صادق خان نے مشترکہ پریس کانفرنس کی۔ اس موقع پر پرویز ملک نے کہا صادق خان سے ملاقات انتہائی مثبت رہی۔ لندن کے میئر کو پاکستان میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتا ہوں۔ صادق خان سے پاکستان میں سرمایہ کاری کے مواقع پر گفتگو ہوئی۔ برطانوی سرمایہ کاروں کے لئے پاکستان میں سرمایہ کاری کے بہترین مواقع موجود ہیں۔ اس موقع پر میئر لندن صادق خان نے کہا کہ اپنے دورے میں پاکستانیوں کی مہمان نوازیوں پر شکر گزار ہوں پاکستان اور لندن کے درمیان دیرینہ تعلقات ہیں۔ پاکستان سے تعلیم سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کررہے ہیں۔ لندن پاکستانی کاروباری افراد کے لئے بہترین شہر ہے۔ بابائے قوم محمد علی جناح نے لندن سے اعلیٰ تعلیم حاصل کی۔ دریں اثناء لندن کے میئر صادق خان نے کہا اگر امریکا کہتا ہے کہ مقبوضہ بیت المقدس اسرائیل کا دارالحکومت ہے تو یہ بہت خطرناک بات ہے۔ ایک انٹرویومیں میئر لندن نے کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خطاب پر تحفظات ہیں، مقبوضہ بیت المقدس اسرائیل اور فلسطین کے درمیان قیام امن کے لئے جاری امن مذاکرات کا حصہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ عالمی سیاست نہیں سمجھتے، ہمیں متحد ہو کر ٹرمپ کو پیغام دینا ہے کہ وہ غلطی پر ہیں اور ہمیں ایسا کرنا چاہیے۔ میئر لندن نے کہا کہ اسلام اور مسلمانوں سے متعلق ڈونلڈ ٹرمپ کے خیالات اچھے نہیں، انہوں نے کہا تھا کہ پوری دنیا سے مسلمانوں کا داخلہ بند کریں گے، میرا مشورہ ہے کہ اسلام اور مسلمانوں کے لئے ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنے خیالات بدلنے چاہئیں ان کا کہنا تھا کہ لوگ کہتے ہیں کہ امریکا اور برطانیہ کے خصوصی تعلقات ہیں، لیکن اگر امریکا کوئی خراب چیز کرتا ہے تو اسے بتایا جاتا ہے کہ آپ غلط کررہے ہیں۔ مزید برآں نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے میئر لندن صادق خان نے کہا ہے کہ مجھے امید ہے پاکستان کا مستقبل روشن ہے۔ مقبوضہ بیت المقدس سے متعلق امریکی فیصلہ بہت خطرناک ہے۔ لندن کے لوگ امریکی صدر ٹرمپ کو پسند نہیں کرتے۔ ٹرمپ کی لندن آمد پر مظاہرے بھی ہوں گے۔ صادق خان نے کہا کہ دہشت گردی اور انتہا پسندی پوری دنیا کیلئے مسئلہ ہے۔ جسے ملکر حل کرنا ہو گا۔ امریکی پالیسیوں سے انتہا پسندی کا زہر پھیل رہا ہے۔ ہمیں دنیا کے سامنے اسلام کا صحیح چہرہ پیش کرنا چاہئے۔ پاکستان اور بھارت کو مسائل حل کرنے کیلئے بات کرنا ہو گی۔ دونوں ملکوں کے درمیان پل کا کردار ادا کرنا چاہتا ہوں۔ پاکستانی طلبا کو لندن میں خوش آمدید کہیں گے۔ بانی پاکستان اور دیگر رہنمائوں نے لندن میں تعلیم حاصل کی۔ علاوہ ازیں میئر لندن صادق خان نے وزیر خارجہ خواجہ آصف سے ملاقات کی۔ خواجہ آصف نے میئر لندن کو پاکستان کی معاشی ترقی سے آگاہ کیا۔ میئر لندن نے کہا کہ پاکستان کیلئے لندن کے دروازے کھلے ہیں۔ علاوہ ازیں میئر لندن کے اعزاز میں برطانوی ہائی کمشنر نے عشائیہ دیا۔