کوئٹہ میں ایس پی انویسٹی گیشن کو نامعلوافراد نےفائرنگ کرکے قتل کردیا،جمیل کاکڑ نے بلوچستان بدامنی کیس میں آج سپریم کورٹ رجسٹری میں پیش ہوناتھا۔

کوئٹہ میں ایس پی انویسٹی گیشن کو نامعلوافراد نےفائرنگ کرکے قتل کردیا،جمیل کاکڑ نے بلوچستان بدامنی کیس میں آج سپریم کورٹ رجسٹری میں پیش ہوناتھا۔

ایس پی انویسٹی گیشن جمیل کاکڑ اپنے گھر سے دفتر جارہے تھے کہ نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نےکوئٹہ کے علاقے ائیر پورٹ روڈ پران کی گاڑی پر اندھا دھند فائرنگ کردی۔ فائرنگ کے نتیجے میں جمیل کاکڑ زخمی ہوگئےجنہیں فوری طور پر سول ہسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئے۔ سکیورٹی فورسز نے علاقے کے محاصرہ کرکے شواہد اکٹھا کرنا شروع کردیے ہیں جبکہ ملزمان کی تلاش بھی جاری ہے۔ جائے وقوعہ  پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سی سی پی اومیرزبیر نے بتایا کہ ایس پی انویسٹی گیشن کو آج سپریم کورٹ میں پیش ہونا تھا۔ جمیل کاکڑ کو کالعدم تنظیم کی جانب سے دھمکیاں مل رہی تھیں تاہم تحقیقات سے قبل کچھ نہیں کہا جاسکتا۔ان کا کہنا تھا کہ فورسز کی ٹارگٹ کلنگ کا یہ سترہواں واقعہ ہے اور آج پولیس ایک فرض شناس افسر سے محروم ہوگئی ہے۔  فورسز کے حوصلے بلند ہیں اور دہشتگردی کیخلاف جنگ میں کسی قربانی سے گریز نہیں کیا جائے گا۔