سندھ کی قوم پرست اور وفاقی جماعتوں نے بھی بلدیاتی نظام مسترد کرتے ہوئے تیرہ ستمبر کو صوبے بھر میں شٹر ڈاؤن اور ہڑتال کا اعلان کیا ہے۔

خبریں ماخذ  |  سٹی رپورٹر
سندھ کی قوم پرست اور وفاقی جماعتوں نے بھی بلدیاتی نظام مسترد کرتے ہوئے تیرہ ستمبر کو صوبے بھر میں شٹر ڈاؤن اور ہڑتال کا اعلان کیا ہے۔

سندھ کی قوم پرست اور وفاقی جماعتوں کے اتحاد سندھ بچاؤ اتحاد کا ہنگامی اجلاس کنوینر سید جلال محمود شاہ کی صدارت میں حیدرمنزل میں ہوا۔ اجلاس میں مسلم لیگ نون کے امیربخش بھٹو، مسلم لیگ فنکشنل سے نصرت سحر عباسی، جسقم سے ڈاکٹر نیازکالانی، سندھ ترقی پسند پارٹی سے ڈاکٹر قادر مگسی، جمعیت علماء اسلام سے سینیٹر خالد محمود سومرو اور دیگر قوم پرست جماعتوں کے رہنماوں نے شرکت کی۔ اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے سید جلال محمود شاہ نے کہا کہ بلدیاتی نظام کا آرڈیننس غیر آئینی ہے جو رات کی تاریکی میں لایا گیا۔ منتخب اسمبلی کو بے اختیار بنا کر صوبے کو آرڈیننس کے ذریعے چلایا جارہا ہے۔ یہ آرڈیننس سندھ کو تقسیم کرنے کی سازش ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ تیرہ سمتبر کو شٹرڈاؤن ہڑتال  کے ساتھ ساتھ وزیراعلیٰ ہاؤس کا گھیراؤ بھی کیا جائے گا۔