حکومت عوامی فلاح و بہبود کیلئے عوام کے پیسہ کے شفاف استعمال کو یقینی بنائیگی : وزیراعظم

حکومت عوامی فلاح و بہبود کیلئے عوام کے پیسہ کے شفاف استعمال کو یقینی بنائیگی : وزیراعظم

اسلام آباد (آئی این پی+اے پی اے) وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ حلیف جماعتوں کی قیادت کی دانشمندانہ پالیسیوں اور حکمت عملی کے باعث موجودہ پارلیمنٹ مدت پوری کر رہی ہے۔ حکومت نے ترقیاتی منصوبوں کے لئے ریکارڈ فنڈ مختص کئے اور کسی امتیاز کے بغیر تمام منتخب نمائندوں کو فنڈز جاری کئے گئے ہیں، حکومت نے ورثے میں ملنے والی امن و امان کی خراب صورتحال، تشدد اور دہشتگردی کے باوجود اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ حلیف جماعتوں کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم پرویز اشرف نے پاکستان پیپلز پارٹی کے لئے غیر متزلزل حمایت پر حلیف جماعتوں کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے مثال قائم کی ہے کہ سیاسی قوتیں عوام کی بہتری اور فلاح و بہبود کے لئے مل کر کام کر سکتی ہیں۔ شہید بے نظیر بھٹو کے وژن کے مطابق مفاہمت کی پالیسی ان کی حکومت کا رہنما سیاسی فلسفہ ہے۔ حکومت اپنی حلیف جماعتوں کے تعاون سے یہ توقع رکھتی ہے کہ گزشتہ ساڑھے چار برسوں کی طرح پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں میں اہم قانون سازی خوش اسلوبی سے منظور ہو جائے گی۔ انہوں نے حلیف جماعتوں پر زور دیا کہ وہ پارلیمنٹ میں ہونے والے مباحثے میں حصہ لیں اور قانون سازی میں کردار کے ذریعے ذمہ داریاں پوری کریں۔ وزیراعظم نے کہا کہ وہ ارکان پارلیمنٹ کو درپیش مسائل سے آگاہ ہیں حکومت ان کے مسائل کو کم کرنے کے لئے تمام کوششیں کرے گی۔ اس موقع پر بندرگاہوں اور جہاز رانی کے وفاقی وزیر بابر غوری، سیفران کے وفاقی وزیر انجینئر شوکت اللہ، سینیٹر مظفر علی شاہ، انور علی چیمہ اور جمیلہ گیلانی نے ایم کیو ایم، فاٹا، مسلم لیگ (فنکشنل)، مسلم لیگ (ق) اور عوامی نیشنل پارٹی کی طرف سے وزیراعظم کو پارلیمنٹ کے اندر اور باہر اپنی جماعتوں کے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔ وزیراعظم نے کہا کہ اچھی حکومت کے ذریعے ہی غریبوں کو ان کا حق دینا ممکن ہے جس کیلئے حکومت اعلیٰ معیار کے قیام کیلئے کوشاں ہے۔ جمہوریت کے تسلسل کیلئے برداشت ضروری ہے ہمارے ساڑھے چار سال اس کی گواہی ہے ہم نے برداشت دکھائی اور مفاہمت کو پالیسی کا حصہ بنایا۔ عوامی فلاح و بہبود کے لئے عوامی پیسہ کے شفاف استعمال کو یقینی بنائیں گے۔ وزیراعظم نے کہا حکومت کسی ادارے سے کوئی ٹکراﺅ نہیں چاہتی، ملک میں موجود توانائی بحران ترجیحی بنیادوں پر حل کر رہی ہے، اچھی حکومت کے ذریعے ہی غریبوں کو ان کا حق دینا ممکن ہے جس کیلئے حکومت اعلیٰ معیار کے قیام کیلئے کوشاں ہے۔ حکومت نہ صرف تاریخی قانون سازی کرنے میں کامیاب ہوئی بلکہ اس نے عوامی بہتری کی پالیسیاں بنائیں، جس سے نہ صرف تبدیلی آئیگی بلکہ ملک کے عوام کا معیار زندگی بہتر کرنے میں مدد دینگے حکومت عوامی فلاح و بہبود کیلئے عوام کے پیسہ کے شفاف استعمال کو یقینی بنائیگی۔ ساڑھے چار سال اس کی گواہی ہے ہم نے برداشت دکھائی اور مفاہمت کو پالیسی کا حصہ بنایا حکومت تنقید کو خوش آمدید کہتی ہے لیکن یہ مثبت ہونی چاہئے۔ ملنے والوں میں وزیر مملکت خواتین وسائل کی ترقی چودھری غیاث احمد میلہ ارکان قومی اسمبلی نواب عبدالغنی تالپور، لیاقت علی خان، لعل محمد خان اور شیر محمد بلوچ شامل تھے۔