حج کوٹہ کیس, اگر وزارت مذہبی امور اپنا کام ٹھیک طرح سے انجام دے تو عدالتوں کو مداخلت کرنے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔ چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ

خبریں ماخذ  |  سٹی رپورٹر
حج کوٹہ کیس,  اگر وزارت مذہبی امور اپنا کام ٹھیک طرح سے انجام دے تو عدالتوں کو مداخلت کرنے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔ چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ

 

چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ جسٹس عمرعطاء بندیال نے کیس کی سماعت شروع کی تو عدالت کے روبرو درخواست گزار ٹور آپریٹرز کی جانب سے بتایا گیا کہ وزارت مذہبی امور کی ناقص حکمت عملی کے باعث ابھی تک میرٹ پر آنے والے ٹور آپریٹرز کو کوٹہ نہیں دیاجاسکا، ٹال مٹول کےساتھ صرف سفارشی

اور نا دہندہ ٹورآپریٹرز کو کوٹہ الاٹ کیا جا رہا ہے جو ناانصافی ہے۔ چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ نے ریمارکس دئیے کہ انتظامیہ کام نہ کرے توعدالتوں کو مداخلت کرنی پڑتی ہے اور پھر الزام عائد کیا جاتا ہےکہ عدالت انتظامیہ کے کام میں دخل اندازی کر رہی

ہے۔ درخواست گزار کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ وزارت مذہبی امور پالیسی بنانے کے بجائے صرف پیسےبنانےمیں مصروف ہے۔ عدالت نے کیس کی مزید سماعت دس ستمبر تک ملتوی کرتے ہوئے وزارت مذہبی امور سے تفصیلی رپورٹ طلب کرلی۔