بھارتی وزیر خارجہ ایس ایم کرشنا کی سربراہی میں اعلیٰ سطحی وفد آج اسلام آباد پہنچے گا

بھارتی وزیر خارجہ ایس ایم کرشنا کی سربراہی میں اعلیٰ سطحی وفد آج اسلام آباد پہنچے گا

اسلام آباد+نئی دہلی (ایجنسیاں + نوائے وقت نیوز) بھارتی وزےرخارجہ اےس اےم کرشنا کی سربراہی مےں اعلیٰ سطحی وفد آج اسلام آباد پہنچے گا، جہاں دونوں ملکوں کے درمےان خارجہ سےکرٹرےوں کی سطح پر بات چےت ہو گی جبکہ بھارتی وزےرخارجہ پاکستانی ہم منصب حنا ربانی کھر سے ہفتہ کو ملاقات کرےں گے، جس مےں بھارتی مےڈےا کے مطابق دہشتگردی کا معاملہ اےجنڈے مےں سرفہرست ہو گا، مےڈےا کا کہنا ہے کہ بھارت کی طرف سے واضح کر دےا گےا ہے کہ دہشتگردی خاص طور پر ممبئی حملوں کا معاملہ انتہائی اہم ہے، ذرائع کے حوالے سے بتاےا گےا ہے کہ دہشتگردی کے علاوہ دےگر امور پر بھی بات چےت ہوگی، تاہم ممبئی حملوں کا معاملہ اولےن ہو گا، کرشنا کے تےن روز دورہ مےں صدر زرداری، وزےراعظم راجہ پروےز اشرف اور دےگر اعلیٰ حکام سے ملاقاتوں کا بھی امکان ہے، بھارتی سےکرٹری خارجہ رانجن متھائی اور ان کے پاکستانی ہم منصب جلےل عباس جےلانی کی آج ملاقات ہو گی، جس مےں وزراءخارجہ ملاقات کے اےجنڈے کو حتمی شکل دی جائے گی، بھارتی وزیر خارجہ اتوار کو واپسی سے قبل لاہور مےں بھی کچھ وقت گزارےں گے، دونوں وزراءخارجہ پاکستان بھارت مشترکہ کمشن کی بھی مشترکہ صدارت کرےں گے، بھارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر چہ نئے وےزا سمجھوتے پر دستخط ہونا ہےں تاہم ےقےن سے ےہ بات نہےں کہی جاسکتی کہ اس دورے مےں ہی اس پر دستخط ہوجائےں گے۔ نئی دہلی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایس ایم کرشنا نے کہا ہے کہ دورہ پاکستان سے زیادہ توقعات نہیں ہیںدورے کا مقصد پاکستان کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانا ہے۔ سربجیت سنگھ کے معاملے پر بات ہو گی۔ پاکستان سے سربجیت سنگھ کے معاملے پر رحم کے خواہشمند ہیں دہشت گردی کے معاملے پر پاکستان سے تعاون کرینگے۔ دوسری جانب بھارتی کابینہ کی سلامتی کمیٹی نے ایس ایم کرشنا کی بات چیت کا ایجنڈا کلیئر کر دیا نجی ٹی وی کے مطابق وزیر خارجہ ایس ایم کرشنا کے ایجنڈے میں دہشت گردی اور ممبئی حملوں کے پاکستان میں ٹرائل شامل ہے۔
اسلام آباد (جاوید صدیق) بھارتی وزیر خارجہ کرشنا دورہ پاکستان میں پنجاب کے وزیراعلیٰ شہباز شریف، عوامی نیشنل پارٹی کے صدر اسفندیار ولی، ق لیگ کے رہنما چودھری پرویز الٰہی اور ایم کیو ایم کی قیادت سے ملاقاتیں کرینگے اور ان سے پاکستان بھارت تعلقات کو بہتر بنانے پر تبادلہ خیال کرینگے۔ وہ بھارت واپسی کے دن 9 ستمبر کو لاہور میں پنجاب کے وزیراعلیٰ شہباز شریف سے ملاقات کرینگے۔ ایس ایم کرشنا ان لیڈروں کو دونوں ممالک میں پائی جانے والی کشیدگی کم کرنے کیلئے بھارت کا دورہ کرنے کی دعوت دینگے۔