ایفی ڈرین کیس : گیلانی کو شامل تفتیش کرنے کا فیصلہ / حنیف عباسی کی عبوری ضمانت منظور

ایفی ڈرین  کیس : گیلانی کو  شامل تفتیش کرنے کا فیصلہ / حنیف عباسی کی عبوری ضمانت منظور

راولپنڈی+ اسلام آباد (اپنے سٹاف رپورٹر سے+ نوائے وقت رپورٹ+ ایجنسیاں) اینٹی نارکوٹکس فورس نے ایفی ڈرین کوٹہ کیس کی تحقیقات کا دائرہ وسیع کر دیا۔ ذرائع نے بتایا کہ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو بھی شامل تفتیش کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ اے این ایف ذرائع کے مطابق سابق وزیراعظم یوسف گیلانی کو سیکرٹری انسداد منشیات ظفر عباس لک کی غیر قانونی تعیناتی کے الزام میں شامل تفتیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایفی ڈرین کوٹہ سکینڈل سامنے آنے کے بعد ظفر عباس لک کو گریڈ 21 سے 22 میں ترقی دیکر سیکرٹری انسداد منشیات تعینات کیا۔ علاوہ ازیں لاہور ہائیکورٹ راولپنڈی بنچ کے جسٹس محمود مقبول باجوہ اور جسٹس علی باقر نجفی پر ڈویژن بنچ نے ممنوعہ کیمیکل ایفی ڈرین کوٹہ کیس میں مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی محمد حنیف عباسی کی عبوری ضمانت منظور کر لی اور اے این ایف کو نوٹس جاری کر دیا اور ہدایت کی کہ 11 ستمبر کو تمام متعلقہ ریکارڈ عدالت میں پیش کیا جائے۔ آئی این پی کے مطابق عدالت نے اے این ایف حکام کو 12 ستمبر تک گرفتار نہ کرنے کا حکم دیا ہے۔ علاوہ ازیں انسداد منشیات کی خصوصی عدالت کے جج چودھری ظفر اقبال نے ایفی ڈرین کوٹہ کیس میں نامزد سابق ڈی جی ہیلتھ اسد حفیظ، ڈیناس فارما سیوٹیکل کے مالک انصر فاروق اور شیخ انصار پر مشتمل تین ملزمان کی درخواست ضمانت کی سماعت مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔ جمعرات کو سماعت کے موقع پر سابق ڈی جی ہیلتھ اسد حفیظ کے وکیل عبدالرشید شیخ نے عدالت کو بتایا کہ اسد حفیظ کی طبیعت ناساز ہے اور ابھی تک اس میں کوئی بہتری نہیں آئی۔ ادھر انٹی نارکوٹکس فورس ارکان قومی اسمبلی علی موسٰی گیلانی اور مخدوب شہاب الدین کی ایفی ڈرین کیس میں گرفتاری کیلئے وفاقی دارالحکومت پر توجہ مرکوز کئے ہوئے ہے اور اے این ایف کو یہ یقین ہو گیا ہے کہ دونوں روپوش اسلام آباد کے کسی بڑے گھر میں موجود ہیں۔ اے این ایف ذرائع نے بتایا کہ دونوں کے ٹیلیفون بھی مسلسل بند ہیں لیکن شواہد بتاتے ہیں کہ ہمارے دونوں ملزم اسلام آباد میں ہی کہیں ہیں۔ دریں اثنا ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ بین الاقوامی نارکوٹکس بورڈ کے وفد کی دورہ پاکستان سے متعلق خبریں بے بنیاد ہیں۔ آئی این بی سی کا دورہ معمول کی کارروائی ہے۔ دو رکنی وفد ایفی ڈرین کی بجائے انسداد منشیات کیلئے پاکستان کی کوششوں کا جائزہ لے گا۔ دو رکنی وفد 11 سے 14 ستمبر تک پاکستان کا دورہ کرے گا۔