لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب اسمبلی میں یونیفیکشن بلاک کے سربراہ ڈاکٹر طاہرعلی جاوید نااہلی کیس کی جلد سماعت کی درخواست مسترد کردی ۔

لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب اسمبلی میں یونیفیکشن بلاک کے سربراہ ڈاکٹر طاہرعلی جاوید نااہلی کیس کی جلد سماعت کی درخواست مسترد کردی ۔

درخواست گزارکےوکیل بیرسٹراحتشام الدین نےعدالت کے روبرو پیش ہو کر موقف اختیار کیا کہ حکومت کے پانچ سال مکمل ہونے میں دو سال باقی رہ گئے ہیں ۔ تاہم تاحال ڈاکٹر طاہر علی جاوید کی نااہلی کیس کی سماعت نہیں ہوسکی۔ درخواست گزار کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ اس کیس کی جلد از جلد سماعت کر کےفیصلہ سنایا جائے کیونکہ طاہر علی جاوید کے خلاف کئی سنگین نوعیت کے مقدمات درج ہیں جن کے باعث طاہر جاوید اسمبلی رکنیت کے اہل نہیں۔
چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس اعجاز احمد چودھری نے قرار دیا کہ عدالت میں ہزاروں کیسز زیرسماعت ہیں اور ججز کی کمی بھی ہے، ان کا کہنا تھا کہ طاہرعلی جاوید اہم معاملہ نہیں جس کے بعد عدالت نے درخواست خارج کردی ۔