سپریم کورٹ حج کرپشن نئی درخواست،کیس کی تحقیقات ایف آئی اے کی بجائے ملٹری انٹیلی جینس سے کرائی جائیں ۔ درخواست گزار

سپریم کورٹ حج کرپشن نئی درخواست،کیس کی تحقیقات ایف آئی اے کی بجائے ملٹری انٹیلی  جینس سے کرائی جائیں ۔ درخواست گزار

سپریم کورٹ میں دائردرخواست پر عرض گزار ذوالفقار بھٹہ ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کرتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ ایف آئی اے سول ادارے ہیں جہاں پہلے ہی غیر قانونی تقرریاں ہو چکی ہیں، ایف آئی اے اور نیب شفاف تحقیقات نہیں کر سکتے ۔ درخواست گزار کا کہنا تھا کہ اگرحج انتظامات میں کرپشن کرنے والوں پر کڑا ہاتھ نہ ڈالا گیا تو وہ سعودی عرب میں امان و امان کی صورتحال کو خراب کرسکتے ہیں۔ انہوں نے موقف اختیار کیا کہ حج کرپشن کیس کو ازخود نوٹس کے ساتھ سنا جائے ۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ حج کرپشن کیس کی سماعت پندرہ مارچ کے بجائے رواں ہفتے کے دوران کرے گی ۔