وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی شنگھائی تعاون تنظیم کےدسویں سربراہی اجلاس میں شرکت کیلئے دو روزہ دورے پر روس روانہ ہو گئے

وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی شنگھائی تعاون تنظیم کےدسویں سربراہی اجلاس میں شرکت کیلئے دو روزہ دورے پر روس روانہ ہو گئے

روس کے شہر سینٹ پیٹرزبرگ میں ہونے والی شنگھائی تعاون تنظیم اجلاس میں شرکت کیلئے روانگی سے قبل چکلالہ ایئربیس پر بات کرتے ہوئے وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ شنگھائی تعاون تنظیم کا اجلاس سیکیورٹی اور اقتصادی مسائل پر بات چیت کیلئے بہترین فورم ہے۔ تنظیم میں شامل تمام ممالک علاقائی انفراسٹرکچر، باہمی روابط، توانائی پراجیکٹس سمیت دیگر باہمی امور پر بحث کریں گے۔ وزیراعظم گیلانی نے کہا کہ روسی وزیر اعظم سےتیسری بار ہونے والی ملاقات میں گیس کی درآمد اورسٹیل ملز کےحوالے سےمعاملات پرگفتگو ہوگی۔ ایک سوال کےجواب میں وزیراعظم نے زوردیا کہ علاقائی تعاون کیلئے تجارت ایک بہترین جز ہے، پاکستان افغانستان سے پہلے ہی ٹرانزٹ ٹریڈ کے حوالے سے معاہدے کرچکا ہےجبکہ وسطی ایشیائی ممالک سےتعاون بڑھانےکیلئے تجارتی پھیلاﺅ کی ضرورت پر زور دے رہا ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اجلاس میں پاکستانی معاملہ بھی اٹھایا جائے گا اور تنظیم کی مکمل رکنیت حاصل کرنے کی کوشش کرے گا۔ سات نومبر کو شروع ہونے والی سربراہی کانفرنس سےقبل وزیراعظم گیلانی چین کے صدرسے بھی ملاقاتیں کریں گے۔واضح رہے کہ وزیر اعظم گیلانی روسی وزیر اعظم ولادی میر پیوٹن کی دعوت پر اجلاس میں شریک ہو رہے ہیں ۔