”را“ کے پاکستان میں دہشت گردی کو شہ دینے پر فوجی قیادت کا سخت نوٹس ، کراچی آپریشن غیر سیاسی ہے ملک عوام اور فوج کی عزت کا ہر حال میں تحفظ کریں گے: کور کمانڈر کانفرنس

”را“ کے پاکستان میں دہشت گردی کو شہ دینے پر فوجی قیادت کا سخت نوٹس ، کراچی آپریشن غیر سیاسی ہے ملک عوام اور فوج کی عزت کا ہر حال میں تحفظ کریں گے: کور کمانڈر کانفرنس

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر+ نیوز ایجنسیاں+ نوائے وقت رپورٹ) کور کمانڈرز نے پاکستان کے اندر دہشت گردی پھیلانے میں ’ بھارت کی بدنام زمانہ خفیہ ایجنسی ”را“ کے ملوث ہونے کا سخت نوٹس لیا ہے۔ یہ پہلا موقع ہے کہ فوج کی اعلیٰ قیادت نے دشمن ملک کی بڑی انٹیلی جینس ایجنسی کا پاکستان کے اندر دہشت گردی اور تخریب کاری کی وارداتوں میں ملوث ہونے کا کھل ذکر کیا اور ایجنسی کو نامزد بھی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق جی ایچ کیو میں منعقد ہونے والی کور کمانڈرز کانفرنس میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے انٹیلی جنس بنیادوں پر آپریشن تیز کرنے کی ہدایت کی تاکہ شہری علاقوں میں دیرپا امن کے لئے جرائم پیشہ عناصر، دہشت گردوں اور ان کی پشت پناہی کرنے والوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ اجلاس میں بری فوج کے پیشہ ورانہ امور کا جائزہ لیا گیا۔ شرکاءنے ملک کی اندرونی و بیرونی سلامتی کی صورتحال پر تفصیل سے غور کیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے آرمی چیف نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب سے دہشت گردوں کو کاری ضرب لگی ہے، فاٹا کی مخصوص جگہوں پر موجود دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملک کو دہشت گردی سے پاک کرنا قومی عزم ہے، معصوم بچوں سمیت ہزاروں پاکستانی دہشت گردوں اور شدت پسندوں کے ہاتھوں شہید ہوئے ہیں۔ ہمارے قانون نافذ کرنے والے اداروں اور ہماری بہادر مسلح افواج نے ان گمراہ کن اور سخت گیر مجرموں سے ہماری آنے والی نسلوں کے مستقبل کو پرامن اور بہتر بنانے کے لئے بہت قربانیاں دی ہیں۔ آرمی چیف نے کہا کہ یہ قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی، دہشت گردی کے خلاف جنگ کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا، اپنے ملک، عوام اور بہادر افواج کی عزت و وقار کا ہر قیمت پر تحفظ کیا جائے گا۔ آرمی چیف نے کہا کہ دہشت گردوں اور جرائم پیشہ عناصر کے خلاف کارروائی غیر سیاسی، بلاامتیاز اور ملک میں امن کے قیام کے لئے ہے۔ نوائے وقت رپورٹ کے مطابق اعلیٰ عسکری قیادت کا کہنا تھا کہ کراچی میں دہشتگردوں اور مجرموں کیخلاف آپریشن غیر سیاسی ہے۔ آرمی چیف نے ہدایات جاری کیں کہ قبائلی علاقوں میں چھپے ہوئے دہشتگردوں کو نشانہ بنایا جائے جبکہ شہروں میں چھپے ہوئے دہشت گردوں اور ان کے ساتھیوں کے خلاف خفیہ معلومات پر آپریشن کو تیز کیا جائے۔ عسکری قیادت نے پاکستان میں بڑھتی ہوئی دہشتگردی میں ”را“ کے کردار کا سخت نوٹس لیا۔ اجلاس میں کہا گیا کراچی میں جرائم پیشہ افراد کے خلاف آپریشن غیر سیاسی اور بلاامتیاز جرائم پیشہ افراد کے خلاف ہے، آپریشن کا مقصد ملک میں امن قائم کرنا ہے۔ جنرل راحیل نے کہا کہ دہشتگردی سے پاک پاکستان ہمارا قومی مقصد ہے۔ آپریشن ضرب عضب میں شاندار کامیابیاں حاصل ہو رہی ہیں۔ ملک و قوم اور فوج کی عزت و وقار کا ہر صورت دفاع کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا دہشتگردی سے پاک پاکستان اب ایک قومی عزم ہے۔ گمراہ لوگوں اور مجرموں کے ساتھ لڑائی میں سکیورٹی اداروں نے بے شمار قربانیاں دیں۔ بی بی سی کے مطابق کور کمانڈرز کے اجلاس میں بھارتی خفیہ ادارے ”را“ کی جانب سے ملک میں دہشت گردی کے واقعات کو مبینہ طور پر شہہ دینے کا سختی سے نوٹس لیا گیا ہے۔ کانفرنس کے بعد فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ اس اجلاس میں ملک کی سکیورٹی کا جائزہ لیا گیا اور دہشت گردی کے واقعات میں بھارتی خفیہ ایجنسی کے ملوث ہونے کے معاملے پر بھی غور کیا گیا۔ آرمی چیف نے شہری علاقوں میں بھی جرائم پیشہ افراد اور دہشت گردوں کے خلاف کارروائیاں تیز کرنے کا حکم دیا ہے۔