سینیٹ آف پاکستان کا نام تبدیل کر کے ہاؤس آف فیڈریشن رکھ دیا گیا

سینیٹ آف پاکستان کا نام تبدیل کر کے ہاؤس آف فیڈریشن رکھ دیا گیا

۔سینیٹ کا اجلاس چیئرمین رضاربانی کی زیر صدارت ہوا، امریکہ میں توہین آمیز خاکوں کی اشاعت کیخلاف سینیٹر مشاہد حسین سید کی جانب سے مذمتی قرارداد پیش کی گئی،، جسے اتفاق رائے سے منظور کرلیا گیا۔ مشاہد حسین نے مطالبہ کیا کہ وزیراعظم اس معاملے پر امریکی صدر سے بات کریں، ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نے رائے دی کہ امریکی سفیر کو طلب کرکے سخت احتجاج کیا جائے، جبکہ اجلاس میں اقوام متحدہ اور او آئی سی سے اس معاملے پرسخت اقدام اٹھانے کا مطالبہ بھی کیا گیا ہے۔دوسری جانب سبین محمود کے قتل پر مذمتی قرارداد بھی اتفاق رائے سے منظورکی گئی، قرارداد نسرین جلیل نے پیش کی، جس میں سبین محمود کے قاتلوں کو جلد گرفتار کا مطالبہ کیا گیا۔۔ایم کیو ایم کی سینٹر نسرین جلیل کا کہنا تھا کہ گزشتہ پانچ ماہ سے کراچی میں کے فور منصوبے پر کوئی عمل نہیں ہوا، کراچی میں پانی کے مسئلے پر فسادات ہوسکتے ہیں، سندھ حکومت کا شہری علاقوں کے ساتھ رویہ متعصبانہ ہے پیپلز پارٹی کے سینیٹر تاج حیدر نے کہا کہ کے فور منصوبے کی عدم تکمیل کا سبب وفاقی حکومت ہے، گزشتہ سال وفاقی حکومت نےاسی ارب روپے کم ٹرانسفر کئے ،