حجاج کرام نے شیطان کو کنکریاں ماریں، عیدالاضحی منائی

حجاج کرام نے شیطان کو کنکریاں ماریں، عیدالاضحی منائی

مکہ المکرمہ (مبشر اقبال لون استانوالہ) لاکھوں فرزندانِ توحید میدانِ عرفات میں وقوف کے ذریعے حجِ اکبر کی سعادت حاصل کر کے اور رات مزدلفہ میں قیام کے بعد نماز فجر کی ادائیگی کے بعد رمی کیلئے منیٰ  چلے گئے۔  حجاج کرام کیلئے ہفتہ کا دن کافی مصروف گزرا۔ حجاج کرام  نے منیٰ میں بڑے شیطان کو کنکریاں ماریں جس کے بعد انہوں نے  قربانی کی۔ قربانی کے بعد سر منڈوا کر یا بال کٹوا کر احرام کھول د ئیے اور سادہ لباس زیب تن کر لیا۔ ان کاموں سے فارغ ہونے کے بعد حجاج  نے مکہ جا کر خانہ کعبہ کا طواف زیارت کی اور شکرانے کے نوافل ادا  کئے۔ حرم شریف سے فارغ ہونے کے بعد واپس منیٰ  چلے  گئے جہاں  مزید دو روز   قیام کریں گے۔ گورنر مکہ مکرمہ شہزادہ مشعل بن عبداللہ بن عبدالعزیز آل سعود نے کہا  1435ھ کا رکن اعظم وقوف عرفہ اور پہلے دن کی رمی کا مرحلہ بخیروخوبی مکمل ہو گیا۔ انہوں نے کہا  خادم حرمین شریفین شاہ عبداللہ ولی عہد شہزادہ سلمان کے شکر گزار ہیں۔ انہوں نے تمام حجاج کرام کو فریضہ حج کی ادائیگی پر مبارکباد پیش کی۔  12 ذوالحجہ مغرب سے  پہلے تمام حاجیوں کیلئے لازم ہے  وہ مکہ مکرکہ مسجد الحرام پہنچ کر طواف زیارت کریں اور اسکے ساتھ ہی مناسک حج مکمل ہو جائیں گے۔   مزید براں سعودی عرب میں گزشتہ روز عیدالاضحی مذہبی جوش و جذبے کے ساتھ منائی گئی۔ نماز عید کا سب سے بڑا اجتماع مسجد الحرام مکہ مکرمہ میں ہوا جس میں لاکھوں فرزندانِ اسلام نے شرکت کی۔ حجاج کرام کی بھاری تعداد نے طلوع آفتاب کے بعد بڑے شیطان کو کنکریاں مارنے کے بعد منیٰ جمرات سے مسجد الحرام مکہ مکرمہ آ کر بیت اللہ شریف میں عیدالاضحی کی نماز ادا کی۔ نماز عید کی امامت کے فرائض امام و خطیب کعبہ فضیلۃ الشیخ ڈاکٹر سعود الشریم نے انجام دیئے۔ امام کعبہ نے حجاج کرام کو ’’حجِ اکبر‘‘ کی سعادت حاصل کرنے پر مبارکباد دی اور کہا حج ملت اسلامیہ کی وحدت کا عظیم مظہر ہے جو عمر بھر میں ایک بار فرض ہے۔ صرف یہی وہ فریضہ ہے جس کی ادائیگی کیلئے پوری دنیا کے صاحب استطاعت مسلمان ایک وقت میں ایک ہی جگہ جمع ہو کر اس فریضہ کو بجالاتے ہیں۔ رنگ و نسل، تہذیب و ثقافت، عادات و اطوار اور ان کی زبانوں میں کتنا ہی اختلاف اور جغرافیائی حدود میں کتنا ہی فاصلہ کیوں نہ ہو سبھی ایک لباس (احرام) میں ایک جیسے اعمال مناست حج میں مشغول زبانی حال و قال سے ایک قلبیہ ’’لبیک اللھم لبیک‘‘ ورد زبان کیے ہوئے ایک معبود برحق کی رضا کے طالب نظر آتے ہیں۔ امام کعبہ نے نبی کریمؐ کی یہ حدیث مبارکہ بیان فرمائی ’جس نے حج کیا اور فحش کلامی، نافرمانی اور جھگڑے سے بچا رہا، وہ اس طرح لوٹے گا جیسے آج اس کی ماں نے اسے جنم دیا‘‘ اللہ تعالیٰ آپ کے حج، عمرہ، زیارت اور تمام مساعی کو قبول و منظور فرمائے۔ آپ سلامتی کے ساتھ اپنے گھروں کو واپس لوٹیں اور حج کے مبارک سفر میں جو آپ کی تربیت ہوئی اسکے ناخوشگوار اثرات ہمیشہ آپ کی زندگی میں رہیں۔ امام کعبہ عیدالاضحی کا خطبہ روح پرور ماحول میں دے رہے تھے حرم شریف کی ساری منظزین داخلی و خارجی صحت، چھتیں، تہ خانے اور حرم شریف کے قریب کی تمام سڑکوں پر نمازی صفیں بچھائے ہوئے تھے۔ امام کعبہ فضیلۃ  الشیخ ڈاکٹر سعود الشریم نے عیدالاضحی کے بارے میں روشنی ڈالتے ہوئے کہا عیدالاضحی ہمیں سنت ابراہیمی کی یاد دلاتی ہے۔ عیدالاضحی سے ہمیں ایثار قربانی، صبر و استقامت پیار و محبت کا درس ملتا ہے اور سنت ابراہیمی ادا کرکے الہ اور اس کے رسولؐ کی خوشنودی حاصل ہوتی ہے اللہ کی راہ میں جانوروں کی قربانیاں دے کر سنت ابراہیمیادا کی جاتی ہے اور یہ سلسلہ قیامت تک جاری رہے گا اور اللہ تعالیٰ مسلمانوں کے اس عمل کو قبول کرے اور ہم پراپنی رحمت فرمائے امام کعبہ نے کہا قربانی کا عمل مال و اسباب کی محبت کو مغلوب اور اللہ تعالیٰ کی محبت کو غالب کرنے کی ٹریننگ ہے جیسا شریعت میں بتایا گیا ہے قربانی اچھے اور خوبصورت جانور کی دی جائے اور اللہ تعالیٰ کے راستے میں وہ پیش کیا جائے جس سے بندہ کا پیار ہو۔ امام کعبہ نے عالم اسلام کے اتحاد، ترقی، استحکام و سلامتی اور مقبوضہ مسلم علاقوں کی بازیابی کیلئے خصوصی دعا فرمائی۔آن لائن کے مطابق سعودی عرب سمیت متحدہ عرب امارات اور عراق سمیت کئی خلیجی ممالک میں ہفتہ کو عیدالاضحی عقیدت و احترام سے منائی گئی۔ امریکہ اور کینیڈا میں مسلمانوں کی بڑی تعداد نے ہفتہ کو عید منائی جبکہ بعض کمیونیٹیز اتوار کو عید منائیں گی۔ برطانیہ میں اس بار بھی تین عیدیں منائی جائیں گی۔ آسٹریلیا، سپین اور فرانس میں اہل سنت مکتبہ فکر نے ہفتہ کو عید منائی جبکہ شیعہ برادری اتوار کو عیدالاضحی منائیگی۔ پاکستان کے قبائلی علاقوں اور پشاور میں راہش پذیر افغان مہاجرین نے ہفتہ کو عیدالاضحی منائی، خیبر ایجنسی کی تحصیل باڑہ میں بھی عیدالاضحی منائی گئی۔ نماز عید کے بعد جانوروں کی قربانی کی گئی۔ خیبر پی کے میں مقیم افغان مہاجرین نے سعودی عرب کے ساتھ عید منانے کی روایت کو برقرار رکھتے ہوئے سعودی عرب کے ساتھ عید منائی، جمرود اور لنڈی کوتل میں آج اتوار کو عید منائی جائیگی اسکے علاوہ پاکستان میں دائودی بوہرا جماعت نے بھی ہفتہ کو عیدالاضحی منائی۔