حکمران اور اسٹیبلشمنٹ چاہیں تو بلوچستان کا مسئلہ حل ہو سکتا ہے: شاہ زین بگٹی

کوئٹہ (بیورو رپورٹ) جمہوری وطن پارٹی کے صوبائی صدر نوابزادہ شاہ زین بگٹی نے کہا ہے کہ بلوچستان میں قیام امن اور جمہوری استحکام کے لئے حکمرانوں کے پاس ہماری بات ماننے کے سوا کوئی راستہ نہیں‘ نام نہاد قوم پرستوں نے بلوچ قوم کو تنہا چھوڑ دیا ہے۔ ”نوائے وقت“ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے شاہ زین بگٹی نے کہا کہ بلوچستان کے موجودہ حالات ماضی کی غلط پالیسیوں کا نتیجہ ہے۔ موجودہ حکمران بلوچستان میں قیام امن کے خواہاں ہیں تو اکبر بگٹی کے قاتلوں کو انصاف کے کٹہرے میں لائیں۔ آپریشن ختم‘ فورسز کا انخلا اور لاپتہ افراد کو منظر عام پر لا کر اعتماد کی فضا بھی بحال کرنا ہو گی۔ حکمران اور اسٹیبلشمنٹ چاہیں تو بلوچستان کا مسئلہ حل ہو سکتا ہے کیونکہ یہ اتنا گھمبیر نہیں جتنا بنا دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جمہوری وطن پارٹی آئندہ انتخابات میں بھرپور شرکت کرے گی۔ ق لیگ کے سوا کسی بھی جماعت سے اتحاد بھی کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں گریٹ گیم کی رٹ لگانے والے شواہد پیش کریں کہ یہاں بیرونی ہاتھ ملوث ہے۔