زرداری مخلص ساتھی ڈھونڈیں‘ 17 ویں ترمیم فوری ختم کر دیں‘ 58 ٹو بی سے دستبردار ہو جائیں: الطافA

لندن / کراچی (ریڈیو مانیٹرنگ + آن لائن) متحدہ کے قائد الطاف حسین نے صدر زرداری کو مشورہ دیا ہے کہ وہ جتنی جلد ممکن ہو 17ویں ترمیم (چند شقوں کو چھوڑ کر) ختم کر دیں اور 58 ٹو بی کے تحت اسمبلیاں توڑنے کے اختیار سے دستبردار ہو جائیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو اداروں سے تصادم کی طرف جانے کا مشورہ نہےں دوں گا، صدر آصف علی زرداری مخلص ساتھےوں کو تلاش کرےں،نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے الطاف حسےن نے کہا کہ انہوں نے صدر کو مشورہ دےا ہے کہ اب مسائل کے حل کی طرف توجہ دی جائے، بڑے مقاصد کے حصول کےلئے پےچھے ہٹنے سے درےغ نہےں کرنا چاہئے، انہوں نے مطالبہ کےا کہ چند شقوں کو چھوڑ کر 17وےں ترمےم کا خاتمہ کر دےا جائے، موجودہ حکومت اور جمہوری نظام کو دےکھنا چاہتے ہےں، اےک سوال پر انہوں نے کہا کہ صدر ملک کے صدر ہی نہےں مےرے بھائی بھی ہےں اور انہےں دوست اور خےرخواہ کی حےثےت سے مشورے دئےے ہےں، انہوں نے کہا کہ مےں حکومت کو اداروں سے تصادم کی طرف جانے کا مشورہ نہےں دوںگا بلکہ جتنے جلدی ہو سکے صدر مملکت اختےارات پارلےمنٹ کو دے دےں۔ دریں اثنا پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم کے درمیان اعلی سطح کا خصوصی اجلاس آئندہ 48 گھنٹوں میں دبئی میں ہونے والا ہے جس میں شرکت کے لئے گورنر سندھ عشرت العباد دبئی چلے گئے ہیں جب کہ ایم کیو ایم کی سندھ سے اعلی قیادت آج دبئی پہنچے گی اس کے علاوہ ایم کیو ایم کے رہنما فاروق ستار، بابر غوری اور انیس قائم خانی جب کہ پیپلز پارٹی کے عاصم صدیقی اور وزیر داخلہ رحمن ملک آج دبئی پہنچیں گے اجلاس میں ملک کی موجودہ صورتحال پر غور کیا جائے گا۔