”طالبان سے خطرہ“ زرداری ذاتی خرچ پر بلٹ پروف گاڑی‘ گارڈ اور سو اسلحہ لائسنس رکھ سکتے ہیں: سندھ ہائیکورٹ

”طالبان سے خطرہ“ زرداری ذاتی خرچ پر بلٹ پروف گاڑی‘ گارڈ اور سو اسلحہ لائسنس رکھ سکتے ہیں: سندھ ہائیکورٹ

کراچی (نوائے وقت نیوز + ایجنسیاں) سندھ ہائیکورٹ نے سابق صدر آصف علی زرداری کو اپنے اور اہل خانہ کے لئے حفاظتی انتظامات مزید سخت کرنے کیلئے ذاتی خرچ پر کالے شیشوں والی بلٹ پروف گاڑی‘ ذاتی گارڈز رکھنے اور سو اسلحہ لائسنس حاصل کرنے کی اجازت دیدی۔ سابق صدر آصف علی زرداری نے سندھ ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی جس میں سابق موقف اختیار کیا کہ ان کی جان کو خطرہ ہے اس لئے انہیں سکیورٹی فراہم کی جائے۔ آئینی درخواست میں کہا کہ بے نظیر بھٹو کو قتل کیا گیا، خدشہ ہے کہ انہیں بھی قتل کر دیا جائے گا۔ درخواست اپنے وکیل فاروق ایچ نائیک اور قریبی معاون ابوبکر زرداری کے ذریعے جمع کرائی، سابق صدر نے کہا انہوں نے بطور صدر بعض سخت فیصلے کئے جس سے ان کی جان کو طالبان اور دیگر تنظیموں سے خطرہ ہے ۔ اس لئے فول پروف سکیورٹی فراہم کی جائے۔ درخواست میں چیف سیکرٹری سندھ، رینجرز اور وفاقی حکومت کو فریق بنایا گیا۔ سندھ ہائی کورٹ نے سابق صدر زرداری کی سکیورٹی سے متعلق درخواست منظور کر لی۔ سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس فیصل عرب اور جسٹس صلاح الدین پنہور پر مشتمل 2 رکنی بنچ نے سابق صدر کی جانب سے دائر درخواست پر ان کو ذاتی خرچے پر بلٹ پروف گاڑی میں سفر کرنے اور ذاتی سکیورٹی رکھنے کی اجازت دیتے ہوئے پولیس اور دیگر سکیورٹی ایجنسیوں کو حکم دیا کہ آصف علی زرداری کو مکمل سکیورٹی فراہم کی جائے تاکہ وہ آزادانہ طور پر ملک بھر میں سفر کر سکیں۔