دھاندلی الزامات، جوڈیشل کمشن تشکیل دینے کیلئے تیار ہیں: پرویز خٹک

دھاندلی الزامات، جوڈیشل کمشن تشکیل دینے کیلئے تیار ہیں: پرویز خٹک

پشاور (نوائے وقت رپورٹ) وزیراعلیٰ خیبر پی کے پرویز خٹک نے بلدیاتی انتخابات کے دوران بدنظمی اور دھاندلی کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی حکومت تحقیقات کے لئے جوڈیشل کمشن تشکیل دینے کیلئے تیار ہے۔ اتحادی جماعتوں کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس میں صوبائی حکومت نے اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے دھاندلی کے الزامات مسترد کردیئے۔ وزیراعلیٰ نے الزام عائد کیا کہ انکی حکومت کو ناکام بنانے کی سازش کی جارہی ہے، بلدیاتی انتخابات کیلئے الیکشن کمشن نے تیاری نہیںکی تھی۔ وزیراعلیٰ کاکہنا تھا کہ الیکشن کے روز وہ اور ان کی حکومت فریادی تھی، اپوزیشن جماعتیں شور مچانا بند کریں۔ مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران جماعت اسلامی کے وزیر خزانہ مظفر سید نے وزیراعلیٰ کے سامنے اپنی جماعت کے مو¿قف کی نفی کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت بلدیاتی انتخابات میں دھاندلی کی ذمہ دار نہیں۔ قبل ازیں گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلی خیبر پی کے پرویز خٹک نے کہا ہے کہ ہم نے الیکشن کمشن سے بلدیاتی انتخابات میں فوج کی تعیناتی کا مطالبہ کیا تھا۔ الیکشن کمشن کی جانب سے مجھے جواب نہیں دیا گیا۔ جہاں گڑبڑ ہوئی وہاں دوبارہ الیکشن ہوں گے۔ صوبائی حکومت کے پاس پولیس کی کمی تھی۔ مختلف علاقوں میں ہنگامے ہوئے، میں پولیس سے رابطہ کرتا تو جواب ملتا ہم بے بس ہیں۔ ہم نے کوئی پری پلان دھاندلی نہیں کی، خیبر پی کے میں ایسا نظام ہے جس میں کوئی مداخلت نہیں کر سکتا۔ ہمیں جیت کا علم تھا دھاندلی کیوں کرتے؟ دو تین روز میں رپورٹ سامنے لے آئیں گے، پولنگ عملے کی ٹریننگ بھی نہیں کی گئی۔ بلدیاتی انتخابات کرانے کا فیصلہ بھی الیکشن کمشن کا تھا۔ سیکرٹری الیکشن کمشن سے کہا تھا کہ شفاف انتخابات کیلئے فوج سے رابطہ کریں، الیکشن کمشن کی جانب سے جواب نہیں آیا۔
پرویز خٹک