افغانستان میں موجود امریکی سپیشل فورسز نے افغان فوجیوں کی تربیت کا عمل معطل کردیا

افغانستان میں موجود امریکی سپیشل فورسز نے افغان فوجیوں کی تربیت کا عمل معطل کردیا

واشنگٹن (ثناءنیوز) افغانستان میں موجود امریکی سپیشل فورسز نے افغان فوجیوں کی تربیت کا عمل معطل کردیا۔ امریکی فورسز کی جانب سے یہ اقدام رواں سال 45 امریکی فوجیوں کی افغان فوجیوں کے ہاتھوں ہلاکت کے بعد اٹھایا گیا ہے۔ واشنگٹن پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق افغانستان میں موجود امریکی کمانڈر کی جانب سے نئے بھرتی کئے گئے فوجیوں کی مکمل چھان بین تک تربیت کا عمل روکا گیا ہے۔ امریکی کمانڈر کا کہنا ہے کہ وہ نئے بھرتی کئے گئے فوجیوں کے بارے میں معلوم کریں گے کہ ان کے عسکریت پسندوں کے ساتھ روابط تو نہیں اور اس سلسلے میں ان کے پاس تحقیقات کا بہتر طریقہ موجود ہے۔ واضح رہے کہ امریکی حکام کی جانب سے افغان فوجیوں کے ہاتھوں امریکیوں کی ہلاکت کے بعد تربیت کا عمل ملتوی کیا گیا ہے۔ افغانستان متعین امریکی سپیشل فورسز کے کمانڈر نے اس شورش زدہ ملک کے فوجیوں کی تربیت کا سلسلہ عارضی طور پر روک دیا ہے تاکہ فوجی وردی میں ملبوس عسکریت پسندوں کی کھوج کی جاسکے۔ امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے مطابق حال میں تواتر سے افغان فوجیوں کے حملوں کے بعد یہ اقدام اٹھایا گیا ہے۔ اب افغان فوج میں شامل اہلکاروں کے عسکریت پسندوں کے ساتھ رابطوں کی چھان بین کا عمل مکمل کیا جائے گا۔ اخبار نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ اس فیصلے سے 27 ہزار نئے افغان فوجی متاثر ہوں گے۔رواں برس 45 امریکی فوجی افغان سکیورٹی فورسز کی وردی میں ملبوس افراد کا نشانہ بنے۔