عدالت نے زین قتل کیس کے مصطفیٰ کانجو سمیت کو 5 ملزمان8 روزہ ریمانڈ پرپولیس کے حوالے کردیاگیا

 عدالت نے زین قتل کیس کے مصطفیٰ کانجو سمیت کو 5 ملزمان8 روزہ ریمانڈ پرپولیس کے حوالے کردیاگیا

پولیس نےملزمان کو انسداد دہشت گردی لاہور کی خصوصی عدالت کے جج رائے ایوب مارتھ کے روبرو پیش کیا،سرکاری وکیل نے عداکت کو آگاہ کیا کہ  مصطفی کانجو نےمحافظوں کے ہمراہ شراب کے نشے میں فائرنگ کی جس کے نتیجے میں دو بہنوں کا اکلوتا بھائی یتیم طالبعلم زین روف موقع پر ہی دم توڑ گیا،،تفتیشی افسر نے عدالت سے استدعا کی کہ ملزموں کو تفتتیش کے لئے دس روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کیا جائےتاہم عدالت نے پانچوں ملزموں کو آٹھ روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا.عدالت میں پیشی کے بعد ملزم مصطفی کانجو نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس نے کسی کا قتل نہیں کیا وہ عدالت میں اپنی بے گناہی ثابت کرئے گاملزم مصطفی کانجووی اوعدالت میں پیشی کے بعد ملزمان کے وکیل بئیرسٹر نوازش کا کہنا تھا کہ ملزم مصطفی کانجو کو پولیس نے گرفتار نہیں کیا بلکہ اس نے خود گرفتاری دی,معاملہ عدالت میں ہے اب ملزمان کا میڈیا ٹرائل بند کیا جائے
بئیرسٹر نوازش
ملزمان کے خلاف دہشت گردی اور قتل کے الزامات کے تحت مقدمے کی کاروائی کو آگے بڑھایا جا رہا
پی ٹی سی