بلاسود قرضوں کیلئے مزید پانچ ارب روپے کا اعلان‘ پچاس لاکھ غریب خاندان مستفید ہونگے : شہباز شریف

بلاسود قرضوں کیلئے مزید پانچ ارب روپے کا اعلان‘ پچاس لاکھ غریب خاندان مستفید ہونگے : شہباز شریف

لاہور+شیخوپورہ (خصوصی رپورٹر+نامہ نگار خصوصی) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے ”وزیراعلیٰ خود روزگار سکیم“ کے تحت رواں سال بلاسود قرضوں کی فراہمی کے لئے مزید 5ارب روپے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے50 لاکھ غریب خاندان مستفید ہوں گے اور انہیں بلاسود قرضے ملیں گے۔ گزشتہ 3 برسوں کے دوران 9ارب روپے کے قرضے 5لاکھ مستحق خاندانوں میں تقسیم کئے گئے ہیں اوران تمام قرضوں کی واپسی سو فیصد ہے،قرضوں کی سو فیصد واپسی خود روز گار سکیم کی سچائی اورکامیابی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ ماضی میں سیاسی بنیادوں پر قرضے معاف کرانے اور غریب قوم کے کھربوں روپے ہڑپ کرنے والی اشرافیہ نے وطن عزیز کے جسم پر گہرے زخم لگائے ہیں جبکہ دوسری جانب غریب گھرانوں نے پاکستان کی ترقی اور اسے آگے لے جانے کےلئے حاصل کئے گئے قرضے سو فیصد واپس کر کے عظیم مثال قائم کی ہے۔ پنجاب کی طرح مہران کی وادیوں، بلوچستان کے سنگلاخ پہاڑوں، کے پی کے کے خوبصورت پہاڑوں میں بسنے والے عظیم پاکستانیوں کو بلاسود قرضے دئےے جائیں تو وہ اپنی محنت کے ذرےعے نہ صرف ےہ قرضے واپس کردیں گے بلکہ وہ پاکستان کو بھی بیرونی قرضوں سے نجات دلا سکتے ہیں۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز الحمرا کلچرل کمپلیکس میں ”وزیراعلیٰ خود روزگار سکیم“ کے تحت مستحق مرد و خواتین میں بلاسود قرضوں کی تقسیم کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب کے آخر میں وزیراعلیٰ نے مستحق مرد و خواتین میں وزیراعلیٰ خود روزگار سکیم کے تحت بلاسود قرضے تقسیم کئے۔ صوبائی وزرائ، ارکان قومی وصوبائی اسمبلی، کالم نگاروں، دانشوروں، این جی اوز کے نمائندوں اور معاشرے کے دیگر طبقات سے تعلق رکھنے والے افراد کی بڑی تعداد نے تقریب میں شرکت کی۔ وائس چیئرمین پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ اور اخوت کے اےگزےکٹو ڈائرےکٹرڈاکٹر امجد ثاقب نے خود روزگار سکیم کے اغراض و مقاصد پر روشنی ڈالی۔ شہبازشریف نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ میرے لئے آج کا دن باعث مسرت اور قابل فخر ہے کہ میں قرض خوروں کے درمیان نہیں بلکہ سوفیصد قرض واپس کرنے والوں میں موجود ہوں۔ آپ نے خود روزگار سکیم کے تحت بلا سود قرضے حاصل کئے، محنت کر کے قرضوں کی سو فیصد واپسی یقینی بنا کرآپ عظیم پاکستانی بن گئے ہیں- دوسری طرف کھربوں روپے کے قرضے ہڑپ کرنے والوں نے پاکستان کو ڈبویا اور اس کے توانا جسم پر گہرے زخم لگائے ہیں- کھربوں روپے کے قرضے معاف کرانا پاکستان کا قتل ہے، بس چلے توقرض خوروں کے پےٹ سے ےہ رقم نکال کرآپ کے حوالے کردوں۔ ملک کو باوقار مقام دلانے کیلئے محنت، دیانت اور امانت کے سنہری اصولوں کو اپنانا ہو گا۔ انہوں نے کہاکہ اگرغریب قوم کے کھربوں روپے کھائے نہ جاتے تو آج 5لاکھ نہیں بلکہ 5کروڑ غریب خاندان مستفید ہوتے۔ میٹرو بسےں صرف لاہور شہر میں نہیں بلکہ پنجاب کے کئی شہروں میں عوام کو معیاری، پائےدار اور باکفایت سفری سہولیات فراہم کر رہی ہوتیں مگر ا فسوس کہ قوم کے کھربوں روپے اپنی جیبوں میں ڈالنے والے خود کو عزت دار سمجھتے ہیں اور ایسے میدان سیاست میں ہےں جیسے وہی سب سے عظیم پاکستانی ہیں اور سمجھتے ہےں کہ وہی پاکستان کی کشتی کو کنارے لگائیں گے، ان لوگوں نے اپنی کوٹھیوں، فیکٹریوں اور زمینوں کے نام پر قرضے حاصل کئے، ان کے کاروبار اور کوٹھیاں تو محفوظ ہیں لیکن غریب قوم کی محنت کی کمائی غائب ہے۔ ہونا تو ےہ چاہےے کہ قرضے ان کے پیٹوں سے نکال کر ان مستحق عظیم پاکستانیوں کے حوالے کئے جائیں جو ملک وقوم کا درد رکھتے ہیں۔ پاکستان کے جسم مےں بے پناہ توانائی اور قوت موجود ہے۔ انہوں نے کہاکہ غریبو ںکی محنت کی کمائی لوٹنے والوں نے کھربوں روپے کے قرضے ہڑپ کرکے غریب قوم کے ساتھ زیادتی اور بڑا جرم کیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ کس قدر ستم ظریفی کی بات ہے کہ پاکستان ایک طرف تو ایٹمی طاقت ہو اور دوسری جانب کشکول گدائی تھامے مارا مارا پھر رہاہو۔ ملک کی تعمیر وترقی کےلئے حاصل کئے گئے قرضے اگر اشرافیہ ہڑپ کر جائے تو ےہ بہت بڑا ظلم ہے اور مےں اسے پاکستان کا قتل سمجھتا ہوں۔ انہوں نے کہاکہ وزیراعلیٰ خود روزگار سکیم کے لئے مربوط نظام وضع کیا گیا ہے اور اس مقصد کےلئے اخوت کے چیف ایگزیکٹو ڈاکٹر امجد ثاقب کی کاوشیں لائق تحسین ہےں، میں صوبائی وزیر صنعت چودھری محمد شفیق، ڈاکٹر امجد ثاقب اور ان کی پوری ٹیم کاشکرےہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے سکیم کو کا میابی سے آگے بڑھایا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ملک کی ترقی کےلئے بے سہارا افراد کا ہاتھ تھامنا ہوگا اور غریبوں کو ساتھ لے کر چلنا ہوگا۔ ڈاکٹر امجد ثاقب نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ وزیراعلیٰ خود روزگار سکیم دنیا میں قرض حسنہ کا سب سے بڑا پروگرام اور غربت کے خاتمے کی سب سے بڑی تحریک ہے۔مزیدبرآں شہباز شریف نے گذشتہ روز شہریوں میں اپنی نوعیت کی پہلی جدید ماڈل مویشی منڈی کا افتتاح کیا۔ افتتاح کے بعد وزیراعلیٰ نے ماڈل مویشی منڈی کا دورہ کیا اور فراہم کی جانے والی سہولتو ںکا جائزہ لیا۔ ماڈل مویشی منڈی کے افتتاح کے بعد وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب حکومت نے شیخوپورہ میں پاکستان میں اپنی نوعیت کی پہلی ماڈل مویشی منڈی قائم کی ہے جہاں مویشی پال حضرات کیلئے جدید سہولتیں ایک چھت تلے فراہم کی گئی ہیں۔مویشی منڈیوں میں لوٹ کھسوٹ اور جگا ٹیکس کی روایت کو دفن کر دیا ہے۔ ماڈل مویشی منڈی کے قیام سے مویشی پال حضرات کو پرچی مافیا سے نجات ملے گی اور کوئی مویشی پال حضرات کا استحصال نہیں کر سکے گا۔ ماڈل مویشی منڈیوں کا دائرہ کار پنجاب کے دیگر اضلاع تک پھیلایا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ماڈل مویشی منڈی میں جانوروں کے تحفظ کیلئے خصوصی شیڈز بنائے گئے ہیں۔سکیورٹی کا باقاعدہ نظام وضع کیا گیا ہے اور ٹرکوں کی فری پارکنگ سہولت بھی فراہم کی گئی ہے۔ ایسی ماڈل مویشی منڈیاں پنجاب بھر میں قائم کی جائیں گی۔مویشی پال حضرات کو بین الاقوامی معیار کی سہولتیں میسر آئیں گی۔ ماڈل مویشی منڈیوں میں مویشی پال حضرات کو جانور کی صحیح قیمت مل سکے گی۔ ماڈل مویشی منڈیوں میں بائیوگیس کے پلانٹ بھی لگائے جائیں گے۔ وزیراعلیٰ نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ بائیوگیس کے پلانٹ کی تنصیب ہونے تک مویشی منڈی کو شمسی توانائی سے بجلی کی فراہمی کی منصوبہ بندی کی جائے۔ وزیراعلیٰ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کسانوں کے حقوق کا ہر قیمت پر تحفظ کریں گے۔ اس موقع پر چےئرمےن کےٹل منڈی افضل کھوکھراےم اےن اے، مےاں جاوےد لطےف، سردار عرفان ڈوگر، عارف خان سندھےلہ، سجاد حےدر گجر، علی اصغر منڈا، رانا ارشد، فےضان خالد ورک سمیت دیگر افسران بھی موجود تھے۔ شیخوپورہ سے نامہ نگار خصوصی کے مطابق شہباز شرےف کے دورہ شےخوپورہ کے موقع پر صدر پرےس کلب شےخوپورہ شہباز احمد خان اور جنرل سےکرٹری سلطان حمےد راہی نے وزےراعلیٰ پنجاب کو پرےس کلب شےخوپورہ کے لئے خصوصی گرانٹ اور صحافےوں کے لئے رہائشی کالو نی کا مطالبہ کےا جس پر وزےراعلیٰ نے انہےں درخواست لکھ کر بھجوانے کی ہداےت کی اور ےقےن دلاےا کہ وہ پرےس کلب شےخوپورہ کے لئے خصوصی گرانٹ اور صحافےوں کے لئے رہائشی کالونی دےں گے۔ مزیدبرآں شہباز شریف کی زیرصدارت گذشتہ روز ایک اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا۔ جس مےںاشیائے ضروریہ، ویجی ٹیبل آئل اور گھی کی مقررکردہ نئی قےمتوں کے حوالے سے اقدامات کاجائزہ لیا گیا۔ شہبازشرےف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عام آدمی کا مفاد سب سے زیادہ عزیز ہے۔کسی کو بھی اوورچارجنگ کے ذرےعے عوام کا استحصال نہےں کرنے دےں گے ۔ عوام کو ریلیف کی فراہمی ہمارا نصب العین ہے۔ تمام متعلقہ ادارے عوام کو ریلیف کی فراہمی کیلئے کمربستہ ہو جائیں۔ ویجی ٹیبل آئل اور گھی کی مقررکردہ نئی کم قیمتوں پر فروخت ہر صورت یقینی بنائی جائے۔پنجاب حکومت کے عوام دوست اقدام سے صوبے بھر کے عوام کو فائدہ پہنچ رہا ہے۔ مزیدبرآں وزیراعلیٰ شہباز شریف سے عالمی بینک کی نائب صدر برائے جنوبی ایشیا ریجن انیٹے ڈیکسن کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی کے امور، تعلیم، صحت، توانائی، سکل ڈویلپمنٹ، ڈیزاسٹر مینجمنٹ اور دیگر شعبوں میں تعاون کو فروغ دےنے پر تفصیلی تبادلہ خیال ہوا-ملاقات میںپنجاب حکومت اور عالمی بینک کے مابین پنجاب میں ہر سال پانچ لاکھ نوجوانوں کو ہنر مند بنانے کیلئے تعاون پر اصولی اتفاق کیا گیا۔ شہباز شریف نے عالمی بینک کی نائب صدر سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان خصوصاً پنجاب اور عالمی بینک کے درمیان مختلف شعبوں میں مثبت اشتراک کار جاری ہے جس کے بہترین نتائج سامنے آ رہے ہیں۔عالمی بینک پنجاب کے تعلیم، صحت،سکل ڈویلپمنٹ اور توانائی کے منصوبوں میں بھر پور تعاون کر رہا ہے۔ لینڈ ریکارڈمینجمنٹ انفارمیشن سسٹم سے پٹواری کلچر کا خاتمہ ہوگااو رلوگوں کو فرد ملکیت کے حصول میں کسی پریشانی کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔ انہوںنے کہاکہ پنجاب میں کوئلے ، سولر،ونڈ، ہائیڈل اور دیگر قابل تجدید ذرائع سے توانائی کے متعدد منصوبوں پر کام جاری ہے اور اس ضمن میں تیز رفتاری سے شفافیت کے ساتھ منصوبوں کی تکمیل کو یقینی بنایا جا رہا ہے۔ انہوںنے کہاکہ پنجاب میں گیس سے 3600میگا واٹ بجلی پیدا کرنے کے منصوبے لگانے کا فیصلہ کیاگیاہے۔ گیس سے 1200میگا واٹ کا منصوبہ پنجاب حکومت جبکہ 2400میگا واٹ کے منصوبے وفاقی حکومت لگائے گی۔انہوںنے کہاکہ پنجاب حکومت نے 2018تک ہر بچے کے سکول جانے کا ہدف مقرر کیا ہے۔ پنجاب کے دور درازعلاقوں کے 4ہزار پرائمری سکولوں کوسولر انرجی پر منتقل کرنے کا پروگرام بنایا گیاہے۔دانش سکولز میں انتہائی کم وسیلہ طبقات کے بچوں اور بچیوں کو داخلہ دیا جاتاہے۔دانش سکول میںزیر تعلیم بچے و بچیاں تعلیم اور امن کے پیامبر ہیں اور میں سمجھتا ہوں کہ دانش سکول انتہاپسندی کے رجحانات کے خاتمے میں کلیدی کردار ادا کر رہے ہیں۔ نارتھ پنجاب میں پانی کے ذخائر کی تعمیر کے حوالے سے عالمی بینک کا تعاون لائق تحسین ہے۔نارتھ پنجاب میں عالمی بینک چھوٹے ڈیم بنانے کے حوالے سے تعاون کو مزید فروغ دے سکتا ہے۔انہوںنے کہاکہ پاکستان اپنے ہمسایہ ممالک سے پرامن تعلقات کا خواہاں ہے۔بھارت کے ساتھ تمام تنازعات کا با مقصد مذاکرات کے ذرےعے حل چاہتے ہیں۔ نائب صدرعالمی بینک انیٹے ڈیکسن نے صوبے کے عوام کی دن رات خدمت کرنے پر وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف کی کارکردگی کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ بلاشبہ 20،20 گھنٹے کام کرکے شہباز شریف نے صوبہ پنجاب کے عوام کیلئے متعدد فلاحی اقدامات کئے ہیں اور وہ عزم کے ساتھ عوام کی خدمت کر رہے ہیں۔
شہباز شریف