چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے لاہورہائی کورٹ میں وکلا پر ہونے والے تشدد کا از خود نوٹس لیتے ہوئے چیف سیکرٹری پنجاب ، آئی جی پنجاب اور سیکرٹری داخلہ کو پیر کے روز طلب کر لیا۔

چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے لاہورہائی کورٹ میں وکلا پر ہونے والے تشدد کا از خود نوٹس لیتے ہوئے چیف سیکرٹری پنجاب ، آئی جی پنجاب اور سیکرٹری داخلہ کو پیر کے روز طلب کر لیا۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج لاہور کے تبادلے کے تنازعہ پر وکلا کے ایک گروپ نے چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ خواجہ محمد شریف کی عدالت پردھاوا بول دیا تھا ۔ اس پر سو سے زائد وکلا کے خلاف مقدمات درج کیے گئے اور انہیں گرفتار بھی کیا گیا ۔ گزشتہ روز  اس تنازعے کے باعث وکلا اور پولیس میں شدید تصادم ہوا جس سے کئی وکلا زخمی ہو گئے ۔ چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے اس صورت حال کا از خود نوٹس لیتے ہوئے سیکرٹری داخلہ ، چیف سیکرٹری پنجاب ، آئی جی پنجاب اور پولیس کے دیگر افسران اور وکلا رہنماؤں کو پیر کے روز طلب کر لیا ہے ۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا تین رکنی بینچ اس کیس کی سماعت کرے گا.