نیٹو کی جانب سے پاکستانی سرحدی حدود کی خلاف ورزی اوربراہ راست حملوں کی مشترکہ تحقیقات کےلیے دو رکنی پاکستانی وفد کابل روانہ ہوگیا۔

نیٹو کی جانب سے پاکستانی سرحدی حدود کی خلاف ورزی اوربراہ راست حملوں کی مشترکہ تحقیقات کےلیے دو رکنی پاکستانی وفد کابل روانہ ہوگیا۔

سرکاری ذرائع کے مطابق دو رکنی وفد اعلیٰ فوجی افسران پر مشتمل ہے جو امریکہ اور نیٹو کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کا حصہ بنے گا۔ تحقیقات کے ذریعے اس بات کا پتا لگایا جائے گا کہ نیٹو نے پاکستانی حدود کی خلاف ورزی کن بنیادوں پرکی ۔ ذرائع کے مطابق تحقیقات پاکستانی اور نیٹو دونوں کے مؤقف کو سامنے رکھتے ہوئے حقائق منظرعام پرلانے اورذمہ داری کے تعین کیلئے کی جا رہی ہے۔ تحقیقاتی ٹیم اپنی حتمی رپورٹ حکومت پاکستان ، امریکہ اور نیٹو ہیڈ کوارٹرز کو جمع کرائے گی۔