بابری مسجد کے فیصلے‘ عافیہ کو سزا کیخلاف دینی و سیاسی جماعتوں کے ملک گیر مظاہرے‘ ریلیاں

لاہور (خصوصی نامہ نگار+ خبرنگار+ نامہ نگاران) بابری مسجد کی شہادت پر بھارتی عدالت کے متعصبانہ فیصلے، ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی سزا کیخلاف مرکزی جمعیت علمائے پاکستان، سنی تحریک، عالمی تنظیم اہلسنت، جے یو آئی (ف) جامعہ اشرفیہ، جمعیت اہلحدیث پاکستان، تحفظ ناموس رسالت محاذ، ورلڈ پاسبان ختم نبوت اور اسلامی جمعیت طلبا نے ملک بھر میں یوم احتجاج منایا، مساجد کے باہر مظاہرے کئے اور ریلیاں نکالیں اور بھارتی اور امریکی حکومت کیخلاف شدید نعرے بازی کی اور پرچم نذر آتش کئے۔ آئمہ کرام نے خطبات جمعہ میں بھارتی عدالت کے غیرمنصفافہ فیصلے کیخلاف قراردادیں منظور کیں۔ مقررین نے بھارتی، امریکی عدالتوں کے فےصلوں کو ظالمانہ قرار دیا اور او آئی سی کو نوٹس لینے کا مطالبہ کیا۔ لاہور میں ایپکا نے بھی عافیہ کی سزا کیخلاف مظاہرہ کیا۔ تفصیلات کے مطابق پیر افضل قادری نے فیصلے کو متعصبانہ قرار دیا۔ مرکزی جمعیت علماءپاکستان کے سربراہ صاحبزادہ فضل کریم، پیر سید محفوظ مشہدی، شاہد گردیزی اور دیگر علماءنے مختلف مقامات پر جمعہ کے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ امریکی اور بھارتی عدالتوں کے فیصلے عالم اسلام کے حکمرانوں کے لئے لمحہ فکریہ ہے، ڈالروں کی چمک نے ہمارے حکمرانوں کو بے دین بنا دیا ہے۔ پیر محمد افضل قادری، شاہد گردیزی، مولانا عاصم و دیگر نے کہاکہ بھارت عدالت نے فیصلہ سیاسی بنیادوں پر کرکے انتہاپسند ہندوﺅں اور اسلام کے دشمنوں کو خوش کیا گیا ہے۔ لاہور میں نماز جمعہ کے بعد داتا دربار چوک میں مظاہرہ کیا گیا۔ جامعہ اشرفیہ کے زیراہتمام بھی فیروزپور روڈ پر حافظ اسعد عبید کی قیادت میں مظاہرہ کیا گیا جس میں مجیب الرحمان انقلابی، اویس ارشد سمیت جامعہ کے طلبا اور نمازیوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔ امریکہ اور بھارت کے خلاف سخت نعرے بازی کی گئی۔ جے یو آئی (ف) کی اپیل پر بھی ملک بھر میں مظاہرے کئے گئے۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مولانا امجد خان نے کہا کہ امریکہ کے بعد بھارتی عدالت کا فیصلہ بھی متعصبانہ ہے، کشمیر میں بھارتی مظالم ختم ہونے کا وقت قریب آ گیا ہے۔ مولانا رشید لدھیانوی، محب النبی، قاری شاد، قاری امجد اور دیگر نے بھی مظاہروں سے خطاب کیا۔ لارنس پر خطاب کرتے ہوئے حافظ ابتسام الٰہی ظہیر نے کہاکہ نام نہاد مسلمان حکمرانوں نے ملک کو امریکہ کا غلام بنا دیا ہے۔ تحفظ ناموس رسالت محاذ کے رہنماﺅں رضائے مصطفی نقشبندی، مولانا راغب نعیمی، ڈاکٹر اشرف آصف جلالی، پیر اطہر القادری، محمد علی نقشبندی اور دیگر نے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بھارتی حکومت کی ہٹ دھرمی کی بنا پر بھارت کا امن تباہ ہو سکتا ہے، فیصلہ انسانی حقوق پر ڈاکہ ہے۔ اسلامی جمعیت طلبہ جامعہ پنجاب نے بھی احتجاجی مظاہرہ کیا۔ ورلڈ پاسبان ختم نبوت نے ممتاز اعوان کی قیادت میں مظاہرہ کیا۔