محرم میں امن برقرار رکھنے کیلئے ہر ممکن اقدامات کریں گے‘ تھانوں میں انصاف ملنا چاہئے : شہبازشریف

 محرم میں امن برقرار رکھنے کیلئے ہر ممکن اقدامات کریں گے‘ تھانوں میں انصاف ملنا چاہئے : شہبازشریف

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف کی زیرصدارت ایک اعلی سطحی اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ محرم الحرام کے دوران سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کئے جائیںگے۔ جامع سکیورٹی پلان مرتب کرکے اس پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے گا۔ اشتعال انگیز تقاریر اور منافرت پر مبنی لٹریچر پھیلانے والوں کے خلاف بلاامتیاز سخت کارروائی کی جائے گی۔ وزیراعلی نے صوبہ بھر میں امن کمیٹیوں کو متحرک اور فعال بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ مساجد اور امام بارگاہوں کی سکیورٹی کے لئے خصوصی اقدامات کئے جائیں۔ سینئر مشیر سردار ذوالفقار علی خان کھوسہ کی سربراہی میں کابینہ کمیٹی عشرہ محرم الحرام کے دوران تمام ڈویژنوں کا دورہ کرے گی اور امن و امان کے لئے کئے گئے انتظامات کا جائزہ لے کر وزیراعلی کو رپورٹ پیش کرے گی۔ جبکہ ماڈل ٹاﺅن میں مختلف اضلاع سے ملاقات کیلئے آئے ہوئے سائلین سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ انصاف کی بالادستی ہی معاشرے کے زندہ رہنے کی علامت ہے۔ رشوت اور سفارش انصاف کی فراہمی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہیں اسے ہرگز برداشت نہیں کیا جائیگا، ظالم کا ہاتھ روکنا اور مظلوم کی دادرسی پولیس کا فرض ہے تھانوں میں انصاف ملنا چاہئے۔ شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام امن و سلامتی کا دین ہے اور محرم الحرام کے دوران فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی ضرورت عام دنوں سے زیادہ ہوتی ہے۔ امن و امان کی فضا برقرار رکھنے کے لئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیں گے، فرقہ واریت پھیلانے والوں کے مذموم عزائم کامیاب نہیں ہونے دیں گے اور ایسے عناصر کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ دشمن ،ملک کو عدم استحکام سے دوچار کرنا چاہتا ہے، ہمیں ملک دشمن عناصر کے عزائم کو اتحاد کی قوت سے خاک میں ملانا ہے۔ امن و امان کے قیام ، مذہبی ہم آہنگی کے فروغ اور بھائی چارے کی فضا برقرار رکھنے کے لئے علمائے کرام سے روابط بڑھائے جائیں۔ مسلم لیگ (ن) کے ارکان اسمبلی اور کارکن بھی محرم الحرام کے دوران بھائی چارے اور امن کے فروغ کے لئے فعال کردار ادا کریں۔ وزیراعلی نے ہدایت کی کہ صوبائی دارالحکومت میں کمانڈ اینڈ کنٹرول روم قائم کیا جائے اور سکیورٹی انتظامات کی موثر مانیٹرنگ کی جائے۔ قانون نافذ کرنے والے ادارے مربوط انداز میں کام کریں اور معلومات کے باہمی تبادلے کے لئے موثر نظام اپنائیں۔ لاﺅڈ سپیکر کے استعمال ، وال چاکنگ اور اسلحہ کی نمائش کی پابندی پر سختی سے عملدرآمد کیا جائے۔ محرم الحرام کے دوران حساس اضلاع میں سکیورٹی کے خصوصی انتظامات کئے جائیں۔ وزیراعلی نے ہوم سیکرٹری اور آئی جی پولیس پنجاب کو ہدایت کی کہ مجالس اور ماتمی جلوسوں کی حفاظت کیلئے واک تھرو گیٹس نصب کئے جائیں اور میٹل ڈٹیکٹرز کے ذریعے جامہ تلاشی لے کر ہی مجالس اور ماتمی جلوسوں میں شرکت کی اجازت دی جائے۔ انہوں نے ہدایت کی کہ حساس آلات مکمل طور پر چالو حالت میں ہونے چاہئیں۔ اجلاس میں محرم الحرام کے دوران امن و امان کی فضا برقرار رکھنے کے حوالے سے مختلف تجاویز پر تفصیلی غور کیا گیا۔ علاوہ ازیں سائلین سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ خلق خدا کو انصاف کی فراہمی سے بڑا کوئی کام نہیں۔ انصاف کی فراہمی میں رکاوٹ بننے والے پولیس افسران کو اپنے عہدوں پر رہنے کا کوئی حق نہیں۔ وزیراعلی نے سائلین کی دادرسی کیلئے موقع پر احکامات جاری کئے جبکہ بعض سائلین کے بچوں کو مفت تعلیم فراہم کرنے کیلئے ہدایات جاری کیں۔ شہباز شریف نے کہا کہ پولیس تفتیش کے دوران انصاف کے تقاضے پورے کرے- جرم کرنے والوں کو قانون کے مطابق ہر صورت سزا ملنی چاہیے۔ ملزم کتنا ہی بااثر کیوں نہ ہو اس سے کسی قسم کی رعایت نہ برتی جائے۔ محکمہ پولیس میں موجود کالی بھیڑوں کا کڑا احتساب کیا جانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ملزموں کی پشت پناہی کرنے والے پولیس افسروں و اہلکار وں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ نہ صرف انصاف فراہم کیا جائے بلکہ میرٹ پر تفتیش کرکے مظلوم کو اس کا حق دیا جائے۔ وزیراعلی نے مظلوم کی دادرسی کیلئے قائم کردہ کمیٹی کی کارکردگی کو سراہا اور کہا کہ انصاف کی فراہمی میں ایم این اے پرویز ملک اور ان کی ٹیم کی کاوشیں لائق تحسین ہیں۔ وزیراعلی نے سانگلہ ہل میں دوہرے قتل کے مقدمے کے اندراج میں تاخیر پر ذمہ دار پولیس افسران کے خلاف کارروائی کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ ملزم فوری گرفتار کئے جائیں۔ وزیراعلی نے مظلوم خاندان کیلئے مالی امداد کا بھی اعلان کیا۔ وزیراعلی نے کاہنہ میں میٹرک کی طالبہ کرن کے قتل کیس میں انصاف کے تقاضے پورے کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے 7 روز میں رپورٹ طلب کرلی جبکہ مدعی خاندان کے بچوں کی مفت تعلیم کا بھی اعلان کیا۔ منشیات کیس میں ملوث ڈی ایس پی اور دیگر پولیس اہلکاروں کی فوری گرفتاری کا حکم دیتے ہوئے وزیراعلی نے کہا کہ ایسے افسران کو پولیس میں رہنے کا کوئی حق نہیں- وزیراعلی نے خوشاب کے رہائشی حافظ طارق عزیز کے والد کے قتل کیس کے تمام ملزمان دو ہفتے میں گرفتار کرنے کا حکم دیا۔ وزیراعلی نے جلال پور بھٹیاں حافظ آباد کی رائس فیکٹری میں ایک مزدور بچے کو زیادتی کے بعد قتل کرنے کے کیس کے شواہد ضائع کرنے پر ذمہ دار پولیس افسران کو گرفتار کرکے کارروائی کرنے کا حکم دیا اور آئی جی پنجاب کو ہدایت کی کہ وہ اس کیس کے بارے میں آئندہ خود رپورٹ پیش کریں- بہاولنگر کے قاری نوراللہ نے بھی وزیراعلی سے ملاقات کی اور والد کے قتل کے ملزموں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا۔ وزیرعلی نے ملزموں کی گرفتاری کا حکم دیتے ہوئے ملزموں کو پناہ دینے اور پولیس کے کام میں مداخلت کرنے والے بااثر افراد کے خلاف بھی سخت کارروائی کی ہدایت کی۔ وزیراعلی نے مدعی خاندان کے ایک فرد کو سرکاری ملازمت دینے اور بچوں کی مفت تعلیم کا اعلان کیا۔ فیصل آباد میں ایک ہی خاندان کے 9 افراد کے قتل کیس کے بارے میں وزیراعلی نے مدعی خاتون کی شکایت پر 10 روز میں تمام ملزم گرفتار کرکے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا جبکہ بٹالہ کالونی فیصل آباد کی خاتون شمشاد بشیر کے مطالبے پر قتل کیس کے ملزم 7 روز میں گرفتار کرنے کی ہدایت کی۔ سائلین نے اپنی شکایات کے ازالے پر وزیراعلی کو دعائیں دیں اور کہا کہ محمد شہباز شریف کی صورت میں ہمیں ایک ایسا مسیحا ملا ہے جو غریب اور کم وسیلہ لوگوں کی دادرسی میں سب سے آگے ہے۔ علاوہ ازیں شہبازشریف سے گزشتہ روز پاکستان میں یوکرائن کے سفیر ولادیمیر لاکوموف نے ملاقات کی۔ اس موقع پر ایم این اے پرویز ملک بھی موجود تھے۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور اور دوطرفہ تعلقات کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعلی نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ پاکستان اور یوکرائن معاشی روابط کو فروغ دیں۔ پنجاب حکومت غیرملکی سرمایہ کاروں کو ہرممکن سہولیات فراہم کر رہی ہے جس سے یوکرائن کے صنعتکاروں اور تاجروں کو بھی فائدہ اٹھانا چاہیے۔ یوکرائن کے سفیر نے صوبے کی ترقی و خوشحالی کیلئے وزیراعلی شہباز شریف کی حکومت کی پالیسیوںکو سراہتے ہوئے ہرممکن تعاون کا یقین دلایا۔علاوہ ازیں شہبازشریف نے کہا ہے کہ زرداری ٹولے نے ملک میں کرپشن اور لوٹ مار کا بازار گرم کررکھا ہے، ہر روز اس کی کرپشن کے سکینڈل سامنے آرہے ہیں۔ اسلام آباد کے نااہل حکمرانوں کی قومی وسائل کی لوٹ مار اور کرپشن پر دل خون کے آنسو روتا ہے۔ آئندہ عام انتخابات میں عوام ٹھگوں کے اس ٹولے کو مسترد کردیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مسلم لیگ (ن) میں شمولیت اختیار کرنے والے چشتیاں سے طاہر بشیر چیمہ کی قیادت میں وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کر رہے تھے۔ انہوںنے کہاکہ مسلم لیگ (ن) کی سیاست کا مقصد عوام کی خدمت اور ملک و قوم کو اقوام عالم میں باوقار مقام دلانا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں کشکول گدائی توڑ کر اپنے وسائل پر انحصار کرتے ہوئے آگے بڑھنے کی پالیسی اپنانا ہو گی۔