عدلیہ کالاباغ ڈیم پر مداخلت نہ کرے‘ جاری رہی تو ہم الجھا دیں گے : قمر الزماں کائرہ

عدلیہ کالاباغ ڈیم پر مداخلت نہ کرے‘ جاری رہی تو ہم الجھا دیں گے : قمر الزماں کائرہ

اسلام آباد (ایجنسیاں+نوائے وقت نیوز) وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات قمر زمان کائرہ نے مطالبہ کیا ہے کہ آئی جے آئی کی تشکیل کا اقرار کرنے پر جنرل حمید گل کے خلاف فوج اور سپریم کورٹ نوٹس لیں۔ جنرل صاحب نے ملک کی جو خدمت کی ہے وہ قوم کے سامنے ہے، عدلیہ کالاباغ ڈیم کے معاملے میں مداخلت نہ کرے۔ عدالتوں میں یہ معاملات جائیں گے تو ہم عدالتوں کو الجھا دینگے جب ہم عدالتی معاملات پر بات نہیں کرتے تو عدالتوں کو بھی گریز کرنا چاہئے سیاسی معاملات کو سیاسی اداروں نے حل کرنا ہے عدالت کو ایسا فیصلہ نہیں دینا چاہئے جس پر عوامی رائے آنا باقی ہو۔ میڈیا سے گفتگو میں قمر زمان کائرہ نے کہا کہ 1990 کے الیکشن میں آئی جے آئی کی تشکیل میں کردار ادا کرنے کے حوالے سے حمید گل کا اعترافی بیان سب کے سامنے ہے۔ انہیں آخری بار مشورہ دے رہا ہوں کہ اپنا لہجہ اور زبان قابو میں رکھیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ پاک فوج اور سپریم کورٹ جنرل حمید گل کے بیان کا نوٹس لیں۔ انہوں نے کہا کہ حمید گل کہتے ہیں کہ انہوں نے آئی جے آئی کی تشکیل میں کردار ذاتی حیثیت میں کیا ،وہ وضاحت کریں کہ ایک جنرل کی حیثیت سے فوج کے ادارے کو استعمال کر کے انہوں نے جو کام کیا وہ ذاتی حیثیت میں کیسے ہو سکتا ہے۔ حمید گل کو یہ اختیار کس نے دیا تھا کہ وہ خود کو ملک کا سکیورٹی ایڈوائزر مقرر کرتے ہوئے سیاسی فیصلے کریں۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش کو تسلیم نہ کرنے کے حوالے سے بھی حمید گل کے بیانات ریکارڈ پر موجود ہیں ۔انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش کو تسلیم نہ کرنا آئین پاکستان کی خلاف ورز ی ہے۔