امن و امان کی ذمہ داری خیبر پی کے حکومت تھی‘ وہ ایک ہی روز الیکشن پر بضد رہی : الیکشن کمشن

امن و امان کی ذمہ داری خیبر پی کے حکومت تھی‘ وہ ایک ہی روز الیکشن پر بضد رہی : الیکشن کمشن

اسلام آباد (نوائے وقت رپورٹ+ آئی این پی) الیکشن کمشن نے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اور وزیراعلیٰ خیبرپی کے پرویز خٹک کو خط لکھا ہے جس میں تحریر کیا گیا ہے بلدیاتی انتخابات میں امن و امان کی ذمہ داری صوبائی حکومت کی تھی، الیکشن کمشن پر عمران خان بے بنیاد الزامات عائد کر رہے ہیں، ہم نے تو خیبرپی کے حکومت کو بلدیاتی انتخابات مرحلہ وار کرانے کی تجویز دی تھی اور ہم نے اضافی فورس کےلئے فوج وزارت داخلہ سے اجازت لے کر جی ایچ کیو سے لے کر دی تھی، مرحلہ وار انتخابات کرائے جاتے تو صورتحال بہتر ہوتی۔ خط میں مزید کہا گیا ہے کہ عمران خان اور پرویز خٹک کے مرحلہ وار انتخابات سے متعلق بیانات میں صداقت نہیں۔ ترجمان الیکشن کمشن نے کہا خیبر پی کے میں ایک ہی دن بلدیاتی انتخابات صوبائی حکومت کے کہنے پر کرائے گئے۔ اس سلسلے میں خیبر پی کے حکومت کے ساتھ 2اجلاس ہوئے۔ بلدیاتی انتخابات کیلئے الیکشن کمشن کا پہلا اجلاس نومبر 2014ءاور دوسرا دسمبر 2014ءمیں ہوا۔ دونوں اجلاسوں میں خیبر پی کے حکومت نے ایک ہی دن انتخابات کرانے پر اصرار کیا۔ الیکشن کمشن نے مرحلہ وار انتخابات کرانے کی تجویز دی تھی۔ جس سے خیبر پی کے حکومت نے اتفاق نہیں کیا۔ تمام اداروں کو امن و امان کے قیام کیلئے اپنا کردار نبھانا چاہئے۔ صوبائی حکومت کی معاونت کیلئے پاک فوج اور دیگر اداروں کی خدمات دی گئیں، حالانکہ امن و امان کا قیام صوبائی حکومت کی ذمہ داری تھی۔ سکیورٹی صورتحال کے پیش نظر صوبائی حکومت کو بلدیاتی انتخابات مرحل وار کرانے کی تجویز دی۔ 2001ءاور 2005ءمیں بھی مرحلہ وار بلدیاتی انتخابات کرائے گئے۔ بلدیاتی انتخابات مرحلہ وار ہوتے تو بدانتظامی اور تشدد کے واقعات سے بچا سکتا تھا۔ صوبائی حکومت اپنی ذمہ داری دوسروں پر مت ڈالے۔ عمران خان اور وزیراعلیٰ خیبر پی کے کی پریس کانفرنس افسوسناک ہے۔
الیکشن کمشن/ خط