چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ اگر آرمی ایکٹ میں ترمیم کرکے اسے مضبوط کردیا جائے تو فوجی عدالتوں کیلئے آئین میں ترمیم کی ضرورت نہیں ہے

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ اگر آرمی ایکٹ میں ترمیم کرکے اسے مضبوط کردیا جائے تو فوجی عدالتوں کیلئے آئین میں ترمیم کی ضرورت نہیں ہے

کل جماعتی کانفرنس میں شرکت کے لئے روانگی سے قبل بنی گالہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف قوم متحد ہے ، جس طرح دہشت گردی پر قوم اکھٹی ہے اسی طرح بھارتی فوج کے ہاتھوں رینجرز اہلکاروں کی شہادت پر بھی یکجہتی ضروری ہے،عمران خان کا مزید کہناتھاکہ فوجی عدالتوں کے قیام کے حوالے سے تحریک انصاف آئین کے اندر رہنا چاہتی ہے اور اگر آرمی ایکٹ میں ہی ترمیم کرکے اسے مضبوط کردیا جائے تو آئین میں ترمیم کی ضرورت نہیں ہے،عمران خان کا کہنا تھا کہ جب تک جوڈیشل کمیشن نہیں بن جاتا ہم اسمبلیوں میں نہیں جائیں گے ، جب ساری جماعتیں کہہ رہی ہیں کہ انتخابات میں دھاندلی ہوئی تو جوڈیشل کمیشن کا بننا بہت ضروری ہے،  انہوں نے کہا کہ اگر حکومت ایسا جوڈیشل کمیشن بنانا چاہتی ہے جو سچائی سامنے نہ لاسکے تو اس سے بہتر ہے کمیشن نہ بنایا جائے