وزیر تعلیم رانا مشہود احمد کہتے ہیں، بارہ جنوری تک تعلیمی اداروں کی سکیورٹی انتظامات مکمل کر لیے جائیں گے جو سرکاری و پرائیویٹ تعلیمی ادارے سیکیورٹی انتظامات مکمل نہیں کریں گے، انہیں پیشہ ورانہ امور انجام دینے کی اجازت نہیں ہو گی۔

وزیر تعلیم رانا مشہود احمد کہتے ہیں، بارہ جنوری تک تعلیمی اداروں کی سکیورٹی انتظامات مکمل کر لیے جائیں گے جو سرکاری و پرائیویٹ تعلیمی ادارے سیکیورٹی انتظامات مکمل نہیں کریں گے، انہیں پیشہ ورانہ امور انجام دینے کی اجازت نہیں ہو گی۔

لاہور میں تعلیمی اداروں کی سیکیورٹی کے بارے میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا مشہود احمد کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی معاملات بہتر بنانے اور بنیادی سہولتوں کی کمی پوری کرنے کیلئے تیس اعشاریہ سات ملین روپے کی رقم جاری کر دی گئی ہے، جہاں چار دیواری اور دیگر سہولتوں بہتر نہ ہوں گی، وہاں پولیس کو گشت پر مامور کیا جائے گا۔ انہوں نےکہاکہ ستائیس سو سکولوں میں مسنگ سہولیات پوری کرنے کاعمل جاری ہے۔ پانچ جنوری تک ستر فیصد تعلیمی اداروں کے سیکیورٹی امورمکمل کرلیے جائیں گے، بارہ جنوری تک جن تعلیمی اداروں کی سیکیورٹی انتظامات مکمل نہ ہوئے ،وہ نہیں کھل سکیں گے۔ رانا مشہود احمد نےکہاکہ مشتبہ افراد پر نظر رکھنے کے لیے رضاکارفورس تشکیل دی جا ری ہے۔ ایک سوال کے جواب میں وزیر تعلیم پنجاب نےکہاکہ ملک احتجاجی سیاست کامتحمل نہیں ہو سکتا، پی ٹی آئی قومی ایشوزکےپیش نظر احتجاج کی کال واپس لے