سمجھوتہ ایکسپریس: حملے میں ملوث فوجی افسروں اور سوامی کو رہا کر دیا‘ تحقیقات سے آگاہ نہیں کیا: پاکستان

سمجھوتہ ایکسپریس: حملے میں ملوث فوجی افسروں اور سوامی کو رہا کر دیا‘ تحقیقات سے آگاہ نہیں کیا: پاکستان

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر + نوائے وقت نیوز) ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ بھارت نے ذکی الرحمن لکھوی کے معاملہ پر خوامخواہ کی سنسنی پیدا کرنے کی کوشش کی اور بھارت کا اپنا یہ حال ہے کہ ابھی تک اس نے سانحہ سمجھوتہ ایکسپریس کی تحقیقات سے پاکستان کو آگاہ نہیں کیا حالانکہ یہ سانحہ ممبئی حملوں سے دوبرس پہلے ہوا تھا۔ ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران ترجمان تسنیم اسلم نے ذکی الرحمن لکھوی کے معاملہ پر بھارتی طرزعمل پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھارت نے نہ تو سانحہ سمجھوتہ ایکسپریس کی تحقیقات کے حوالے سے کوئی تعاون کیا نہ ہی اس نے پاکستان کو اس ضمن میں کوئی دستاویزات فراہم کی ہیں۔ اس سانحہ میں ملوث ملزم سوامی آسینند جس نے اقبال جرم بھی کیا ہے، اسے اور دیگر ملزموں جن میں فوجی افسر بھی شامل ہیں، کو ضمانت پر رہا کیا گیا۔ ورکنگ بائونڈری پر بھارتی فائرنگ کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں ترجمان نے کہا کہ پاکستان نے اس جارحیت پر نہ صرف شدید احتجاج کیا ہے بلکہ احتجاجی مراسلہ بھی بھیجا ہے۔ بھارتی جانب سے سفید جھنڈے کے ساتھ ہمارے فوجیوں کو فلیگ میٹنگ کی استدعا کی گئی، جب وہ نکلے تو ان پر گھات لگا کر حملہ کیا گیا۔ بھارت کی یہ جارحیت عالمی قوانین اور باہمی مفاہمت کی شدید ترین خلاف ورزی ہے۔ پاکستان مطالبہ کرتا ہے کہ بھارت اس واقعہ کی تحقیقات کرے اور ذمہ داروں کو مثالی سزا دی جائے۔ بھارت کی فراہم کردہ فہرست کے مطابق اس کی جیلوں میں دو سو ترپن عام پاکستانی شہری اور ایک سو بتیس ماہی گیر ہیں لیکن اس کے برعکس پاکستان کے ریکارڈ کے مطابق قیدیوں کی تعداد زیادہ ہے جن میں تین سو ساٹھ پاکستانی شہری اور ڈیڑھ سو ماہی گیر بھارتی جیلوںمیں قید ہیں۔ پاکستان بھارت تعلقات کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ پاکستان بھارت سمیت تمام پڑوسیوں کے ساتھ اچھے تعلقات چاہتا ہے۔ بھارت نے خود ہی پاکستان کے ساتھ مذاکرات منسوخ کئے، اب خود ہی اس مذاکراتی عمل کو وہیں سے بحال کرے جہاں سے منقطع کیا گیا تھا۔ انہوں نے امریکی وزیرخارجہ کی پاکستان آمد کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان سٹرٹیجک مذاکرات رواں ماہ اسلام آباد میں ہوں گے جس کے لئے حتمی تاریخوں کا تعین کیا جارہا ہے۔ گزشتہ برس اسلامی دنیا، یورپ، امریکہ اور دیگرخطوں کے ساتھ پاکستان کے تعلقات مزید مضبوط ہوئے ہیں۔ مستحکم اور خوشحال افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے۔ پاکستان ایران گیس پائپ لائن کے بارے میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان توانائی بحران سے نمٹنے کیلئے اس منصوبہ کی تکمیل کیلئے پرعزم ہے۔ انہوں نے اس توقع کا اظہار کیا کہ افغانستان میں خوش اسلوبی سے اتحادی افواج کے انخلا اور نئے سکیورٹی بندوبست کا عمل مکمل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی ہائی کمشن نے نئی دہلی میں پاکستانی سفارت خانے کو بھارت میں قید پاکستانی قیدیوں کی فہرست سپرد کر دی ہے۔ بھارتی ہائی کمشن کی فہرست کے مطابق 255 عام پاکستانی شہری جبکہ 152 پاکستانی ماہی گیر بھارت کی جیلوں میں موجود ہیں لیکن پاکستانی معلومات کے مطابق بھارت میں 360 پاکستانی شہری اور 150 ماہی گیر قید ہیں۔ ذکی الرحمان لکھوی کا معاملہ عدالت میں ہے، بھارت نے ذکی الرحمان لکھوی کی ضمانت پر غیر ضروری واویلا کیا۔ پاکستان ایران گیس پائپ لائن کے لئے پُرعزم ہیں، دونوں مالک رابطے میں ہیں۔ پاکستان تمام ہمسایہ ممالک کے ساتھ امن کا خواہاں ہے، بھارت کے ساتھ قیدیوں، پرامن اور مستحکم افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے، اپنی سرزمین کسی ملک کیخلاف استعمال نہیں ہونے دیں گے، سمجھوتہ ایکسپریس حملے کی تحقیقات تاحال مکمل نہیں ہوئی، حملے میں بھارت کی عسکری و سیاسی قیادت ملوث ہے۔ بھارتی فورسز کی فائرنگ سے 2 جوان شہید ہوئے۔ پاکستان دہشتگردی کے خاتمے کے لئے پرعزم ہے۔ پرامن ومستحکم افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے۔