دھرنے جاری‘ حکمرانوں کو اقتدار کی فکر ہے‘ امریکی ناراضگی سے ڈرتے ہیں: عمران

دھرنے جاری‘ حکمرانوں کو اقتدار کی فکر ہے‘ امریکی ناراضگی سے ڈرتے ہیں: عمران

پشاور (ثناء نیوز) پاکستان تحریک انصاف اور اتحادی جماعتوں کا نویں روز بھی رنگ روڈ پر نیٹو سپلائی کے خلاف دھرنا جاری رہا اس دوران پی ٹی آئی کارکنوں نے نیٹو سپلائی کے شبہ میں پانچ کنٹینرز کو روک لیا ۔دھرنا میں کے پی کے 9 سے پی ٹی آئی کے رکن صوبائی اسمبلی بھی موجود تھے کارکن نیٹو سپلائی کے شبہ میں گاڑیوں کو چیک کر رہے تھے، اس دوران پانچ کنٹینرز کو روک لیا تاہم رکن صوبائی اسمبلی کے کہنے پر ان کنٹینرز کو جانے دیا گیا ۔واضح رہے کہ پی ٹی آئی اور اس کی اتحادی جماعتیں گزشتہ 9 روز سے ڈرون حملوں کی بندش کے لئے نیٹو سپلائی کو روکے ہوئے ہیں۔ پی ٹی آئی کا کہنا ہے کہ خیبر پی کے میں نیٹو سپلائی اس وقت تک بند رہے گی جب تک امریکہ پاکستان کے قبائلی علاقوں میں ڈرون حملے بند نہیں کرتا ۔رنگ روڈ حیات آباد انٹرچینج کے قریب پی ٹی آئی ،جماعت اسلامی اور عوامی جمہوری اتحاد کے رضا کاروں کا دھرنا جاری ہے۔کارکن کنٹینرز کو روک کر کاغذات چیک کرنے کے بعد جانے کی اجازت دے رہے ہیں۔ اب تک متعدد کنٹینر نیٹو سامان لے جانے کے شک میں واپس بھیجے جا چکے ہیں۔تاہم افغان رانزٹ ٹریڈ کے تحت جانے والے کنٹینرز اور دیگر گاڑیوں کی آمد و رفت بدستور جاری ہے۔ دھرنے میں شریک افراد کی سکیورٹی کے لئے خصوصی انتظامات کئے گئے ہیں۔دوسری جانب ڈیرہ اسماعیل خان ، بنوں، کوہاٹ اور دیر میں بھی تحریک انصاف اور جماعت اسلامی کے کارکنوں نے نیٹو سپلائی اور ڈرون حملوں کی بندش کے خلاف احتجاجی دھرنے دیئے ہیں۔
لاہور/ساہیوال(آئی این پی) تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے  حکمران کو ملک کی نہیں اقتدار کی فکر ہے‘ امر یکہ کی ناراضگی سے ڈرتے ہیں‘ ڈرون حملوں کی بندش کیلئے ملک میں بزدل نہیں جرات مند حکومت کی ضرورت ہے‘ ہم نے نٹیو سپلائی روکنے کا فیصلہ ملک کے مفاد میں کیا اس کے بدلے میں ہر قربانی دینے کو تیار ہیں‘  مسلم لیگ (ن) اور پیپلزپارٹی کی حکومت میں صرف نام کا فرق ہے دونوں کی پالیساں ایک ہیں‘ ملک میں کر پشن‘ مہنگائی اور بے روز گاری سمیت کوئی مسئلہ حل نہیں ہو سکا‘ 22دسمبر سے مہنگائی کیخلاف احتجاج کا آغاز کیا جائیگا‘ بلدیاتی انتخابات میں عوام کا فیصلہ حکمرانوں کے خلاف ریفرنڈم ثابت ہو گا ۔ تحر یک انصاف ساہیوال کے صدر شکیل نیازی کی قیادت میں ملاقات کرنیوالے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے  انہوں  نے کہا  امریکہ کو  حکمرانوں کی کوئی فکر نہیں کیونکہ ا نہیں پتہ ہے اوپر سے ڈرون حملوں کی مذمت کرینگے مگر اندر سے ان کے حمایتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ  مسلم لیگ (ن)  نے اقتدار میں آنے سے پہلے قوم سے بہت سے وعدے کیے لیکن آج کسی بھی وعدے پر عمل نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے ملک میں مہنگائی اور بے روز گاری کا طوفان آچکا ہے ۔ انہوں نے کہا  ڈرون حملے ملک کی سالمیت اور خودمختاری کے خلاف ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ دہشت گردی میں اضافہ ہوتا ہے ۔ انہوں نے کہا ڈرون حملوں کی بندش تک کسی بھی صورت نیٹو سپلائی بحال نہیں کی جائے گی‘ پاکستان کے عوام ہمارے ساتھ ہیں ہمیں کسی اور حمایت کی ضرورت نہیں  اور ہم عوام کی امنگوں کے مطابق سیاست کرتے رہیں گے۔